ڈیمو کرٹیک پارٹی کے صدارتی ٹکٹ کے 6امیدواروں میں مباحثہ،الزبتھ وارن بازی لے گئیں

  ڈیمو کرٹیک پارٹی کے صدارتی ٹکٹ کے 6امیدواروں میں مباحثہ،الزبتھ وارن بازی ...

  



واشنگٹن(اظہر زمان،بیورو چیف) امریکی ریاست آئیووا میں ڈیمو کرٹیک پارٹی کی صدارتی ٹکٹ کے چھ امیدواروں کے درمیان ہونیوالے مباحثے میں الز بتھ وارن کا پلڑا بھاری رہا۔ ”سی این این“ ٹیلی ویژن چینل نے ایک مقامی کمپنی کے اشتراک کے اس مباحثے کا اہتمام کیا جس کیلئے سابقہ پول اور فنڈر یز نگ کے نتائج کی بناء پر چھ امیدواروں کا چناؤ کیا گیا،جن میں سینیٹر الزبتھ وارن، سینیٹر برنی سینڈرس، سابق نائب صدر جوبیڈن،سابق سٹی میئر پیٹ بٹیگگ، سینٹر ایمی کلو بچر اور ارب پتی سرمایہ کار ٹائم سٹائر شامل تھے۔ ان امیدواروں کے درمیان زیادہ تر مشرق وسطیٰ کی تازہ صورتحال کے علاوہ ہیلتھ کیئر اور ماحول کے مو ضوعات پربحث ہوئی، ان چھ امیدواروں میں دو خواتین الزبتھ وارن اور ایمی کلوبچر شامل تھیں، تاہم جب بزرگ سینیٹر برنی سنیڈرس نے کسی خاتون کے صدر بننے کی اہلیت کوچیلنج کیا تو اس وقت الزبتھ وارن نے دفاع کی ذمہ داری اٹھاتے ہوئے وویمن کارڈکاکامیاب استعمال کیا۔ مبصرین کے مطابق انہوں نے جس انداز سے اپنے دلائل کے ذریعے سینیٹر برنی سنیڈرس کولاجواب کیا اور خواتین کی قوت اور ان کے حقوق کی بات کی، وہ یقیناً مباحثے کو جیتنے میں مدد گاہ ثابت ہوئی۔ سابق نائب صدر جوبیڈن نے بتایا کہ صدر ٹرمپ کے مواخذے کے مقدمے سے بری ہونے سے ان کی حیثیت میں کوئی اضافہ نہیں ہو گا کیونکہ ان پر موخذاے کا دھبہ لگنا ہی انہیں ناکام ثابت کرنے کیلئے کافی ہے۔ مباحثے کے پہلے نصف حصے میں مشرق وسطیٰ کی تازہ صورتحال ار اس کے بارے میں امریکی پالیسی کے موضوع پر تفصیلی بحث ہوئی اور امید واروں کے درمیان ترقی پسند اور معتدل حصوں میں تقسیم واضح نظر آئی۔ امید واروں نے مشرق وسطیٰ میں فوجی موجودگی برقرار رکھنے کیساتھ ایران جوہری ہتھیاروں اور شمالی کوریا کے بارے میں اپنا اپنا نقطہ نظر پیش کیا۔ مشرق وسطیٰ میں فوج برقرار رکھنے کے سوال پر سینیٹر برنی سنیڈرس اور سینیٹر الزبتھ وارن دونوں نے مشرق وسطیٰ سے اپنی فوج واپس بلانے کی حمایت کی جبکہ سابق نائب صدر جوبیڈن اور سابق سٹی میئر بٹیگگ نے دلائل دیئے کہ اگر امریکہ نے مشرق وسطیٰ سے فوج کو مکمل طور پر واپس بلا لیا توداعش جیسی دہشت گرد قوتیں وہاں پھرسر اٹھا سکتی ہیں۔ ارب پتی امیدوار ٹام سٹائرنے بحث میں حصہ لیتے ہوئے کہا تجارت کا معاملہ ہمیشہ ان کی اولین ترجیح رہے گا۔ اس کیساتھ انہوں نے ماحول کی تبدیلی کے موضوع پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا اس پر بین الاقوامی اتفاق رائے حاصل کرنے کی ضرورت ہے۔

الزبتھ وارن

مزید : صفحہ اول