چین، پاکستانی شعبہ زراعت میں سپیشل اکنامک زون کے قیام کا خواہشمند

  چین، پاکستانی شعبہ زراعت میں سپیشل اکنامک زون کے قیام کا خواہشمند

  



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) چینی سفیر یاؤ جنگ کا کہنا ہے کہ پاکستان میں زراعت کے شعبے میں سپیشل اکنامک زون کے قیام کے خواہاں ہیں۔ان خیالات کا اظہار چینی سفیر نے وفاقی وزیر برائے غذائی تحفظ خسرو بختیار سے وفاقی دارالحکومت میں ملاقات کے دوران کیا۔ اس موقع پروفاقی سیکرٹری ہاشم پوپلزئی اور زرعی تحقیقاتی کونسل کے چیئرمین ڈاکٹر عظیم موقع پر موجودتھے۔وفاقی وزیر برائے غذائی تحفظ خسرو بختیار نے کہا ہے کہ پاکستان اور چین کے درمیان زرعی معاملات مثبت سمت میں جا رہے ہیں۔ دونوں ممالک کے ما بین زرعی معاونت سی پیک کا ایک اہم ترین جزو ہے۔کپاس کی زیادہ پیداوار کے حصول کے لیئے پاکستان- چین کے باہمی تعاون سے تحقیقی سینٹر کا قیام خوش آئند ہے۔خسرو بختیارنے کہا کہ چین جنوبی ایشیا میں ایک مضبوط مقام رکھتا ہے اور سی پیک نے دونوں ممالک کے درمیان تعاون کو نئی جہت دی ہے۔انہوں نے کہا کہ ڈی پی پی کے تکنیکی ماہرین چیری، آلو، پیاز اور آم کی پاکستان سے درآمد سے متعلق چینی ہم منصب سے رابطے میں ہیں اور اس سلسلے میں معاملات جلد طے پا جائیں گے۔ ملاقات میں چینی تعاون سے پاکستان میں منہ کھر بیماری سے پاک زونز کے قیام کے معاملے میں پیش رفت پر تفصیلی بات چیت کی گئی۔ منہ کھر بیماری کے تدارک سے پاکستان کی گوشت کی برآمد میں اضافہ ہو گا۔

چین

مزید : صفحہ آخر