ینگ ڈاکٹرز کی افضل نامی شخص کیخلاف دائر ہرجانہ کیس کی سماعت ملتوی

ینگ ڈاکٹرز کی افضل نامی شخص کیخلاف دائر ہرجانہ کیس کی سماعت ملتوی

  



لاہور(نامہ نگار)سول جج نیلم بشارت نے ڈاکٹرز کیخلاف جھوٹا مقدمہ درج کرانے پرینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کی جانب سے افضل نامی شخص کیخلاف دائر 50کروڑ روپے ہرجانہ کیس کی سماعت آئندہ تاریخ پیشی تک ملتوی کرتے ہوئے وکلاء کو بحث کے لئے طلب کرلیاہے۔گزشتہ روزینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کے سیکرٹری ڈاکٹر سلمان کاظمی عدالت پیش ہوئے،عدالت میں افضل نامی شہری نے معافی نامہ جمع کرا دیاہے،معافی نامے کے مطابق اس کا کہناہے کہ اس سے غلطی ہوئی،اسے معافی دی جائے اورہرجانہ کا دعویٰ واپس لیاجائے، ڈاکٹرسلمان کاظمی کا موقف ہے کہ افضل نامی شہری نے سابق حکومت کے وزیرصحت کے ایماء پر مبینہ طور پرڈاکٹروں کے خلاف جھوٹامقدمہ درج کرایا،افضل نامی شخص نے مقدمہ واپس لینے کے لئے ڈاکٹروں سے پانچ لاکھ روپے بھی مانگے، جھوٹا مقدمہ درج ہونے پرڈاکٹروں کو جیل جانا پڑا جس سے ان کی ساکھ متاثر ہوئی،عدالت نے کیس کی مزید سماعت ملتوی کرتے ہوئے وکلاء کو بحث کیلئے طلب کرلیاہے، ڈاکٹر سلمان کاظمی سمیت 8ڈاکٹروں نے مذکورہ شخص کے خلاف 50کروڑ ہرجانے کادعوی دائرکررکھاہے،افضل نامی شخص نے میوہسپتال میں اپنے بیٹے کی ہلاکت کا ڈاکٹروں کے خلاف مقدمہ درج کرایا تھاتاہم عدالت نے اس مقدمہ میں نامزد آٹھوں ڈاکٹروں کے خلاف درج ایف آئی آر گواہوں اورثبوتوں کی عدم دستیابی پرخارج کردی تھی۔

ینگ ڈاکٹر درخواست

مزید : علاقائی


loading...