زراعت میں جدت بذریعہ نئی ٹیکنالوجی کانفرنس کا انعقاد

زراعت میں جدت بذریعہ نئی ٹیکنالوجی کانفرنس کا انعقاد

  



اسلام آباد(پ ر) امریکی ادارہ برائے بین الاقوامی ترقی (یو ایس ایڈ) نے آج اسلام آباد میں اپنی نوعیت کی پہلی " زراعت میں جدت بذریعہ نئی ٹیکنالوجی کانفرنس ۲۰۲۰ کا اہتمام کیا۔ کانفرنس میں زرعی ٹیکنالوجی کی تجارت سے وابستہ تیس متحرک کاروباری اداروں کے اشتراک سے پاکستان کے زرعی شعبہ میں تجارت کے فروغ میں پاک امریکہ تعاون کے ثمرات کو اجاگر کیا گیا۔ یہ کانفرنس یوایس ایڈ کے چار سالہ پاکستان ایگریکلچرل ٹیکنالوجی ٹرانسفر ایکٹویِٹی(پِی اے ٹی ٹی اے)کا حصہ ہے جس کا نصب العین پاکستانی کسانوں کو زراعت سے متعلقہ جدید مصنوعات اور نظم و نسق کے طور طریقوں تک رسائی کے لیے نجی شعبہ کی حوصلہ افزائی کرناہے، جس سے پیداوار میں بہتری اور مسابقت کاری میں اضافہ ہوتا ہے۔کانفرنس کی خاص بات پی اے ٹی ٹی اے کے "ایگری ٹیک ہب " کی نقاب کشائی تھی،جو منصوبہ سازوں اور شراکت دار زرعی تجارتی اداروں کے جانب سے پہلی بار متعارف کروائی جانے والی زرعی ٹیکنالوجی کا مرکزہے۔

کانفرنس میں کلیدی زرعی شراکت داروں نے پاکستانی زراعت کی ترقی، روزگارکے نئے مواقع پیدا کرنے ،جدیدکاشتکاری ٹیکنالوجی کے حصول کی حوصلہ افزائی، لاگت میں کمی اور کسانوں اور کاشتکاروں کے مسائل کے حل کے موضوعات پر مباحثہ بھی کیا۔ وزارت تحفظ خوراک و تحقیق کے جوائنٹ سیکریٹری ڈاکٹر محمد خورشید نے آمدن میں اضافہ سے کسانوں کو بااختیار بنانے اور تحفظِ خوراک میں بہتری کے حوالہ سے یو ایس ایڈ کے کردار کی تعریف کی۔

مزید : کامرس


loading...