جنرل قاسم سلیمانی قتل،ایران کا عالمی عدالت سے رجوع کا فیصلہ

جنرل قاسم سلیمانی قتل،ایران کا عالمی عدالت سے رجوع کا فیصلہ

  



تہران، واشنگٹن (نیوز ایجنسیاں)ایران کی جانب سے جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کیخلاف عالمی عدالت سے رجوع کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔ترجمان ایرانی عدلیہ غلام حسین اسماعیلی کا کہنا ہے امریکی صدر ٹرمپ نے ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کے احکامات دینے کا اعترا ف کیا ہے جو عدالت میں پیش کیے جانے کیلئے مضبوط ثبوت ہوسکتا ہے۔ اس میں کوئی شک نہیں امریکی فوج کا یہ ایکشن دہشت گردی کی کا ر ر وائی تھی۔ایرانی ترجمان عدلیہ کا کہنا ہے عالمی عدالت میں کیس طوالت اختیار کرسکتا ہے لیکن ایران اسے اختتام تک پہنچائے گا،اس سے قبل ترجمان ایرانی عدلیہ نے کہا تھا کہ یوکرائن کا طیارہ غیر ارادی طور پر مار گرائے جانے کے الزام میں کچھ افراد کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔واضح رہے 3 جنوری کو عراق میں امریکہ کی جانب سے ایرانی کمانڈر قاسم سلیمانی کو نشانہ بنایا گیا تھا جس کے نتیجے میں سمیت قاسم سلیمانی 6 افراد کی امریکی ڈرون حملے میں ہلاکت ہوئی تھی۔ اس واقع کے بعد سے ایران اور امریکہ کے درمیان کشیدگی میں اضافہ ہوا ہے۔ادھر ایران کی جانب سے یوکرائن کے ایک طیارہ کو مار گرائے جانے میں جن پانچ ممالک کے شہریوں کی موت ہوئی ہے ان کا لندن میں ایک اجلاس ہوگا جس میں ایران کیخلاف قانونی کارروائی کے امکان پر غور کیا جائیگا۔ بین الاقوامی میڈیا کے مطابق بتایا گیا ہے پانچ ممالک کے وزرائے خارجہ کا ایک گروپ بنایا گیا ہے جو لندن میں ملاقات کرکے قانونی کارروائی کے امکانات کا جائزہ لے گا۔ اجلاس آج 16جنوری کو ہوگا۔

ایران فیصلہ

مزید : صفحہ اول