کینجھر جھیل میں زہریلا مواد ڈالنے والوں کے خلاف کارروائی ہوگی،جام اکرام

  کینجھر جھیل میں زہریلا مواد ڈالنے والوں کے خلاف کارروائی ہوگی،جام اکرام

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر) صوبائی وزیر برائے صنعت و تجارت و امداد باہمی جام اکرام اللہ دھاریجو نے کینجھر جھیل میں فیکٹریوں کا زہریلہ پانی شامل کرنے کی خبر کا نوٹس لیتے ہوئے سیکریٹری انڈسٹریز سندھ سمیت متعلقہ افسران سے رپورٹ طلب کی ہے اور سیکریٹری صنعت سندھ اور متعلقہ افسران کو ہدایت کی ہے کہ وہ فوری طور کینجھر جھیل کا وزٹ کریں اور اس کی رپورٹ پیش کریں۔۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ اگر واقعی فیکٹریوں کا زہریلہ پانی کینجھر میں چھوڑدیا جاتا ہے اور ٹریٹمنٹ پلانٹ کا استعمال نہیں کیا جاتاتو فیکٹری مالکان کے خلاف قانون کے تحت کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ مجھے بتایا گیا ہے کہ نوری آباد اور کے بی فیڈر کوٹڑی میں ٹریٹمنٹ پلانٹ نصب ہیں۔اور ان ٹریٹمنٹ پلانٹ سے فیکٹریوں کا پانی گذر کر صاف ہو جاتا ہے جس سے خطرہ نہیں ہوتا۔ صوبائی وزیر جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ کینجھر جھیل نوری آباد سے 35 کلو میٹر کے مفاصلہ پر ہے اس کے بیچ میں پہاڑی علاقہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ کینجھر جھیل سندھ کا ایک حسین مقام ہے اور کینجھر جھیل کی حفاظت ہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے۔ جام اکرام اللہ دھاریجو نے کہا کہ سندھ حکومت کینجھر جھیل کی بھتری کے لیے کام کر رہی ہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...