سینڈ یکیٹ اجلاس نشتر میڈیکل یونیورسٹی کیلئے 6ارب 23کروڑ روپے کی منظوری

سینڈ یکیٹ اجلاس نشتر میڈیکل یونیورسٹی کیلئے 6ارب 23کروڑ روپے کی منظوری

  



ملتان‘ڈیرہ (وقائع نگار‘ نمائندہ خصوصی) نشتر میڈیکل یونیورسٹی کا ساتواں سینڈیکیٹ اجلاس گزشتہ روز صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد کی زیر صدرات منعقد ہوا ہے۔جس میں نشتر میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر مصطفے کمال پاشا۔پروفیسر وقار ربانی۔پروفیسر افتخار بوبی۔ایم ایس ڈاکٹر شاہد محمود بخاری سمیت دیگر ممبران نے شرکت کی۔میٹنگ میں مذکورہ میڈیکل یونیورسٹی کے(بقیہ نمبر7صفحہ12پر)

وائس چانسلر نے ڈاکٹر یاسمین راشد کو مختلف امور کے حوالے سے تفصیلی بریفننگ دی۔بجٹ سمیت اہم مسائل کو زیر بحث لایا گیا۔ اجلاس میں چھٹے سنڈیکیٹ اجلاس کے منٹس کی منظوری دی گئی۔اس کے علاؤہ نشتر میڈیکل یونیورسٹی کیلئے چھ ارب 23 کروڑ روپے کی بھی منظورہ دی گئی ہے۔نشتر ٹو پراجیکٹ کیلئے ادا شدہ پانچ سو ملین روپے کی منظوری دی گئی ہے۔سنڈیکیٹ میٹنگ میں مجموعی طور پر چودہ نکاتی ایجنڈا پیش کیا گیا۔جس میں بیرونی دیوار و نشتر کے ملکیتی پلوں پر تشہیری بورڈ لگانے کے علاؤہ بقایا جات تمام ایجنڈہ ائیٹمز اتفاق رائے سے منظور کرلیئے گئے ہیں بعدازاں نشتر میڈیکل یونیورسٹی میں صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ منعقدہ سینڈیکیٹ میٹنگ میں بجٹ سمیت دیگر مسائل زیر بحث لائے گئے ہیں۔خوشی کی بات ہے کہ نشتر ٹو شروع ہو چکا ہے۔جنوبی پنجاب کو 9.2 بلین کا یہ پراجیکٹ ملا ہے۔جو ایک ہزار بیڈ کا سٹیٹ آف آرٹ ہسپتال ہو گا۔ہماری کوشش ہو گی کہ نیورو سرجری کے بہترین سہولیات وہاں میسر ہوں۔اور اس میں ٹراما سنٹر بھی بہت بہتر ہو گا۔انہوں نے مزید بتایا کہ جب سے پی ٹی آئی کی حکومت آئی ہے۔تب سے محکمہ کو 26 ہزار ملازمین دی گئیں ہیں۔ جبکہ دس ہزار نئی ملازمتیں پائپ لائن میں ہیں۔ اس سال کے آخر میں 35 ہزار نئی ملازمین دے دی جائیں گی یہ سب پبلک سروس کمیشن کے تھرو ہوا ہے36 اضلاح میں صحت کارڈ تقسیم کیئے جا چکے ہیں۔ 70 ہزار صحت کارڈ معزور افراد کو دیئے گئے ہیں۔30 ہزار صحت کارڈ تھیلیسمیا سے متاثرہ بچوں میں تقسیم کیئے جائیں گے۔ میانوالی میں ہسپتال شروع ہو چکا ہے۔ جن 9 ہسپتالوں کی ہم بات کرتے تھے ان میں سے 3 پر کام شروع ہو چکا ہے اور 3 کا پی سی ون بن چکا ہے۔ 32 ارب روپے صرف ادویات کی مد میں رکھے ہیں ہر ہسپتال کو مقررہ وقت پر فنڈز دیا جاتا ہے۔118 پراجیکٹ پچھلی حکومت نے شروع کیئے تھے جو نامکمل ہیں ان پر بھی کام ہو رہا ہیمحکمہ صحت ڈویلپمنٹ کے 45 ارب روپے موجود ہیں۔ کوئی بھی ہسپتال یا لیب کو پرائیویٹ نہیں کیا جا رہا۔نواز شریف صاحب جب پاکستان سے باہر گئے تھے تو انکو ایک ہفتے ا اپنا علاج معالجہ کروانے کیلئے دیا گیا تھا۔نواز شریف کے وکیل نے 25 تاریخ کو نواز شریف کی واپسی کی مدت میں توسیع کی درخواست دی جمع کروائی گئی رپورٹ میں کچھ ایسا نہیں تھا جس پر توسیع دی جائیتین تاریخ کو رپورٹ واپس ہوم ڈیپارٹمنٹ کو بھیجی کہ نواز شریف کی مکمل رپورٹس منگوائیں۔میں نے 13 تاریخ کو عدنان صاحب کو فون کیا کہ ہمیں رپورٹس بھیجیں انہوں نے کہا بھجوا دونگا۔ یہ رپورٹ یو کے ہائی کمیشن کو جمع کروائیں گے وہ تحقیق کے بعد ہوم ڈیپارٹمنٹ کو بھیجی جائیں گی پھر ہمارے پاس آئیں گی۔نواز شریف کو حکومت اور کورٹ نے انسانی ہمدردی ہر نواز شریف کو سہولت دی۔ہماری خواہش ہے کہ نواز شریف اپنا علاج جلد مکمل کر واپس آئیں نشتر ہسپتال میں 33 ڈیلی ویجز ملازمین کو ریگولر کیا جاچکا ہیں۔ وزارت داخلہ نے نواز شریف کی رپورٹس کل بھجوائی ہیں اس کو دیکھ کر بات کریں گے۔ صوبائی وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے ٹیچنگ ہسپتال ڈیرہ غازیخان کا اچانک دورہ کیا. گائنی، برن یونٹ، پلاسٹک سرجری او ردیگر وارڈز کا معائنہ کرتے ہوئے مریضوں کی عیادت اور انہیں فراہم طبی سہولیات کا جائزہ لیا. سپیشل سیکرٹری ڈویلپمنٹ نادر چٹھہ،ایم پی اے ڈاکٹر شاہینہ نجیب کھوسہ، پرنسپل میڈیکل کالج پروفیسر ڈاکٹر آصف قریشی، ایم ایس ڈاکٹر شاہد حسین مگسی، ایس ای بلڈنگز حافظ جاوید اقبال، ایکسیئن ہمایوں مسرور، ڈاکٹر رضوان، ڈاکٹر عثمان، ڈاکٹر خالد تحسین، پرنسپل نرسنگ سکول کلثوم بی بی او ردیگر ہمراہ تھے. صوبائی وزیر نے ٹیچنگ ہسپتال کی زیر تعمیر مسنگ سپیشلٹیز کی تین منزلہ عمارت کو مکمل طو رپر فنکشنل کرنے کیلئے ایک ماہ کا وقت دیا. منصوبے پر ایک ارب 92کروڑ روپے سے زائد رقم خرچ کی جارہی ہے صوبائی وزیر صحت نے وارڈ سطح پر چھ کمیٹیاں تشکیل دے دیں جو 48گھنٹوں کے اندر نئے بلاک کے تمام کمرو ں، دیواروں اور تعمیراتی کام کی خامیوں کی نشاندہی اور سفارشات پیش کریں گی. صوبائی وزیر نے نئی تعمیر شدہ عمارت میں سیم نظر آنے اور فنشنگ کوالٹی پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے خامیاں دور کرنے کیلئے 15فروری تک کی ڈیڈ لائن دی. انہوں نے گائنی وارڈ کے لیبر روم میں گنجائش نہ ہونے پر مزید دو لیبر روم تعمیر کرنے اور نئے بلاک میں فیملی ہیلتھ کلینک کے شعبہ کیلئے بھی کمرے مختص کرنے کی ہدایت کی. صوبائی وزیر نے ہسپتال میں سنٹرل آئی سی یو کا بھی افتتاح کیا اور فراہم طبی سہولیات کا جائزہ لیا. انہوں نے ٹیچنگ ہسپتال میں چارسو بیڈ کی گنجائش کے حامل گائنی وارڈ کی تعمیر کے بھی احکامات جاری کیے. پہلے مرحلے میں 250بیڈ کا گائنی وارڈتعمیر کیا جائے گامنصوبے پر دو ارب روپے کا تخمینہ لگایاگیاہے. ہسپتال میں دو سو بیڈ کاحامل ایمرجنسی اور او پی ڈی بلاک بھی تعمیر ہو گا جس پر ساڑھے چار ارب روپے کا تخمینہ لگایاگیا ہے.صوبائی وزیر ڈاکٹر یاسمین راشد نے چار لفٹ بند ہونے پر رپورٹ طلب کر لی. انہوں نے مریض کے لواحق کی طرف سے باہر کی ادویات خریدنے کی شکایت پر انکوائری رپورٹ طلب کر لی. صوبائی وزیر نے گائنی بلاک میں داخل مریضوں کے لواحقین کیلئے مزیدبنچز نصب کرنے کے بھی احکامات جاری کیے. صوبائی وزیر نے ایم پی اے ڈاکٹر شاہینہ نجیب کھوسہ کو ترغیب دی کی کہ وہ ہفتہ میں دو بار ٹیچنگ ہسپتال کا دورہ کر کے مریضوں کے لواحقین کو ہیلتھ ایجوکیشن پر لیکچر دیں. میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہاکہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے شعبہ صحت میں 26ہزار نئے ملازم بھرتی کیے اور مزید دس ہزار آسامیوں پر بھرتی کیلئے پبلک سروس کمیشن اور این ٹی ایس کے ذریعے کام جاری ہے. انہوں نے بتایا کہ صوبہ کے 33اضلاع میں صحت کارڈ جاری کر دیئے گئے ہیں باقی تین اضلاع میں کام کیا جارہاہے.انہوں نے کہاکہ آج کے دورہ کا مقصد کارڈیالوجی انسٹی ٹیوٹ کی جگہ کا معائنہ اور ٹیچنگ ہسپتال میں فراہم سہولیات کا جائز ہ لینا ہے. دریں اثنا صوبائی وزیر نے ٹیچنگ ہسپتال کے اندر متعلقہ افسران کا اجلاس طلب کر کے ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل کیلئے باقاعدہ ٹائم لائن طے کی. انہوں نے کارڈیالوجی انسٹی ٹیوٹ کیلئے پرانی سبزی منڈی کی جگہ کا بھی معائنہ کیا۔ ادھر صوبائی وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ میاں نواز شریف کوعدالت اور حکومت نے صرف علاج کرانے کے لئے بیرون ملک جانے کی اجازت دی تھی -- نوازشریف کوچائیے کہ ہ وہ جلد صحتیاب ہوکرواپس آئیں وہ ڈیرہ غازی خان میں ٹیچنگ اسپتال کے دورہ کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کررہی تھیں. انہوں نے کہا کہ نوازشریف کو ضمانت صرف علاج کے لئے دی گئی تھی اور 25 دسمبر کو انکی بیرون ملک علاج کرانے کی مہلت ختم ہوگئی تھی تاہم نوازشریف کی ہوٹل والی تصویر دیکھ کر انہیں تسلی ہوئی کہ اب وہ صحت یاب ہوگئے ہیں مگرڈاکٹرعدنان سے رابطہ کرنے پرپتاچلاکہ ابھی انکے ٹیسٹ جاری ہیں تاہم میرے شور مچانے پرنوازشریف کی تازہ ترین میڈیکل رپورٹس اب بجھوائی گئی ہیں اور میری معلومات کے مطابق نوازشریف کی نئی میڈیکل رپورٹس ہوم ڈیپارٹمنٹ کومل چکی ہیں انہوں نے کہا کہ ہوم ڈیپارٹمنٹ سے میڈیکل رپورٹس جاری ہونے پردوبارہ میڈیکل بورڈتشکیل دیکر رپورٹس کاجائزہ لے کرآئندہ کالائحہ عمل اختیار کیاجائیگا. ڈاکٹر یاسمین راشد کاکہناتھاکہ ن لیگ نوازشریف کی بیماری پر سیاست کررہی ہے پی ٹی آئی نے نوازشریف کی بیماری پرکبھی بھی سیاست نہیں کی - نوازشریف چودہ دن ہمارے مہمان رہے اور ہماری حکومت نینوازشریف کوعلاج معالجہ کی بہترین سہولیات فراہم کیں انہوں نے کہا کہ نوازشریف نے پہلی بار سرکاری اسپتال میں علاج کروایا اوروہ ہمارے علاج معالجہ سے مکمل طورپر مطمئن بھی تھے انہوں نے کہا کہ پنجاب کے تمام سرکاری اسپتالوں میں علاج معالجہ کی بہترین سہولیات کیساتھ کیساتھ مریضوں کو مفت ادویات فراہم کی جارہی ہیں لیکن اپوزیشن ادویات کے معاملہ پر منفی پروپیگنڈہ کر رہی ہے

وزیر صحت

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...