آٹا بحران سرکاری کوٹہ حاصل کرنیوالی فلورملز کی مانیٹرنگ کا فیصلہ: ٹیمیں تشکیل

آٹا بحران سرکاری کوٹہ حاصل کرنیوالی فلورملز کی مانیٹرنگ کا فیصلہ: ٹیمیں ...

  



ملتان ‘ وہاڑی‘ بہاولپور‘ راجن پور‘ میلسی (سپیشل رپورٹر‘ بیورو رپورٹ‘ سٹی رپورٹر‘ ڈسٹرکٹ رپورٹر تحصیل رپورٹر) ضلع بھر میں آٹے کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے محکمہ خوراک سے سرکاری گندم کا کوٹہ حاصل کرنے والی فلور ملوں کی مانیٹرنگ کا فیصلہ کرلیا گیا ،ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر نے محکمہ خوراک کے 21 اسسٹنٹ فوڈ کنٹرولر اور فوڈ گرین انسپکٹروں پر مشتمل مانیٹرنگ ٹیمیں تشکیل دیدیں ہیں۔اس ضمن میں ڈسٹرکٹ(بقیہ نمبر46صفحہ12پر)

فوڈ کنٹرولر ملتان ملک ممتاز وینس نے محکمہ خوراک سے سرکاری گندم کا کوٹہ حاصل کرنے والی فلور ملوں کی مانیٹرنگ کیلئے محکمہ خوراک کے افسران اور انسپکٹروں پر مشتمل ٹیمیں تشکیل دید ی ہیں جو فلور ملوں کو فراہم کی جانے والی گندم کے مطابق شہر میں آٹے کی فراہمی اور سپلا ئی کی مانیٹرنگ کریں گی۔جبکہ مذکورہ ٹیمیں فلور ملوں کی جانب سے فراہم کئے جانے والے آٹے کی حکومت کے مقرر کردہ نرخوں پر فراہمی کو بھی یقینی بنائیں گی۔ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر ملتان کی جانب سے محکمہ خوراک کے جن افسروں کا ڈیوٹی روسٹر جاری کیا گیا ہے ان میں اسسٹنٹ فوڈ کنٹرولر سید ندیم عباس شاہ،محمد آصف خان،ملک ہاشم بھٹہ جبکہ فوڈ گرین انسپکٹرز چوہدری مزمل،نیاز علی شاہ،رانا مختیار،غلام عباس،سیلم اختر قریشی شہزاد قیصر،شاہد رضا،محمد کاشف،صاحبزادہ محمد ایوب،جام قیصر،عبدالغفار،محبوب احمد خان،چوہدری عمران،زوار حسین بلوچ،راناعبدالجبار،اور جام الطاف شامل ہیں۔ ضلعی انتظامیہ اور محکمہ خوراک کے افسران شہریوں کو کنٹرول ریٹ پر آٹا فراہم کرنے کے لیے گزشتہ روز متحرک رہے۔اسسٹنٹ کمشنر سٹی عابدہ فرید نے ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر ،اسسٹنٹ فوڈ کنٹرولر سید ندیم عباس اور فوڈ گرین انسپکٹر سیلم اختر قریشی کے ہمراہ سمیجہ آباد سمیت شہر کے مختلف مارکیٹوں اور آٹے کے سیل پوائنٹس کا دورہ کیا۔ تمام پوائنٹس پر 20 کلوگرام وزن کے آٹے کا تھیلا 805 روپے میں دستیاب تھا۔ڈسٹرکٹ فوڈ کنٹرولر ملک محمد ممتاز نے اس موقع پر اسسٹنٹ کمشنر سٹی کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ ضلع ملتان میں آٹے کا کوئی بحران نہیں ہے اور محکمہ خوراک ضلع ملتان کے پاس 10 لاکھ بوری گندم کا سٹاک موجود ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ضلع ملتان کے شہری اور دیہی علاقوں میں آٹے کے خصوصی 64 سیل پوائنٹس قائم کئے گئے ہیں جہاں سرکاری نرخ پر آٹا دستیاب ہے۔ ڈی ایف سی نے بتایا کہ مارکیٹ میں روزانہ 20 کلوگرام وزن کے 29 ہزار 250 تھیلے آٹا فراہم کیا جارہا ہے۔ملک ممتاز وینس نے بتایا کہ 20 کلو وزن کے آٹے کے بیگ کا ایکس مل ریٹ 783 روپے ہے جبکہ اس تھیلے کا پرچون ریٹ 805 روپے ہے۔انہوں نے مزید بتایا کہ ضلع میں ان 64 پوائنٹس کے علاوہ فلور ملز کے اپنے ڈیلرز بھی موجود ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ فلور ملز مالکان کو دوکانداروں کو بل دینے کا پابند بنایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا 46 فلور ملز کے علاوہ چیکیوں کو بھی گندم کا کوٹہ فراہم کیا جارہا ہے اور ضلع کے کسی بھی کونے میں آٹے کا کوئی بحران نہیں ہے۔ وہاڑی شہر اور نواحی علاقوں میں آٹے کا بحران شدت اختیار کر گیا ہے ضلع بھر میں آٹا سستے داموں تو درکنار مہنگے ریٹس پر بھی دستیاب نہیں جبکہ فلور ملز کی جانب سے بات سامنے آئی کہ حکومت کی جانب سے فلور ملز کا گندم کوٹہ محدود کر دیا گیا ہے جس کی وجہ سے ضلع بھر میں آٹے کی سپلائی متاثر ہوئی ہے شہریوں محمد علی، نواز فیصل اکبر محمد بلال اکرم بھٹی سلیم محمد رفیع و دیگر نے بتایا کہ شہر بھر میں آٹے کی شدید قلت ہے سرکاری نرخوں پر تو درکنار مارکیٹ ریٹس پر بھی آٹا دستیاب نہیں ہے انہوں نے حکومت پنجاب، وزیر خوراک پنجاب اور ڈپٹی کمشنر وہاڑی سے فوری طور پر صورتحال کا نوٹس لینے اور آٹا فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے صوبائی وزیر خوراک پنجاب سمیع اللہ چوہدری نے کہا ہے کہ عوام کو ریلیف فراہم کرنے کے لیے تمام تروسائل بروئے کار لائے جائیں اور حکومت کی جانب سے رعایتی کنٹرول ریٹ پر آٹے کے سٹال شہر کے معروف چوراہوں پر لگائے جائیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کمشنر بہاول پورڈویژن آصف اقبال چوہدری سے ان کے دفتر میں ملاقات کے دوران کیا۔اس موقع پرممبر قومی اسمبلی فاروق اعظم ملک، پی ٹی آئی رہنما قیوم اعظم خان، ریحان بن جاوید، سمیرا ملک اور دیگر کارکن صوبائی وزیر خوراک سمیع اللہ چوہدری کے ہمراہ موجود تھے۔صوبائی وزیر خوراک نے کہا کہ آٹے کی مصنوعی قلت پیدا کرنے اور گراں فروشی کے مرتکب عناصر اورذخیرہ اندوزوں کے خلاف بھرپور کریک ڈاؤن کا آغاز کرتے ہوئے سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے اورمصنوعی گرانی کے خاتمہ کے لیے انتظامی افسران بلاتفریق کارروائی کو یقینی بنائیں۔کمشنر بہاول پور ڈویژن نے اظہار خیال کرتے ہوئے بتایا کہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس گراں فروشی کے خلاف سخت ترین اقدامات اٹھا رہے ہیں۔انہوں نے مزید بتایا کہ آٹے اور دیگر اشیائے ضروریہ کی مارکیٹ میں بلا تعطل فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے ہر ممکن اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔کمشنر بہاول پور ڈویژن نے بتایا کہ تینوں اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز کو ہدایت کی گئی ہے کہ اشیائے ضروریہ کی ذخیرہ اندوزی کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے اورپرائس کنٹرول مجسٹریٹس ودیگر انتظامی افسران قیمتوں میں توازن برقرار رکھنے کے لیے سختی سے مانیٹرنگ کریں۔انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ عوام کو بھرپور طریقے سے ریلیف فراہم کرنے کے لئے آٹا خصوصی سیل پوائنٹس کی تعداد میں بھی اضافہ کیاجائے گا۔قبل ازیں صوبائی وزیر خوراک سمیع اللہ چوہدری نے چوک فوارہ (ختم نبوت چوک)پر محکمہ خوراک کی جانب سے عوام کو ریلیف فراہم کرنے کے لئے قائم کردہ سستا آٹا سٹال کا معائنہ کیااور موقع پر موجود متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ سستے آٹے سٹال پررعایتی نرخوں پر آٹے کی بلاتعطل فراہمی کو یقینی بنایا جائے۔ راجن پور شہر اور دیہات میں آٹا نایاب ہوگیا، دیہات میں تو بیس کلو گرام کاتھیلہ ایک ہزار روپے تک فروخت ہورہا ہے آٹے کی قلت پر قا بو پا نے کیلئے اضلاع کی پابندی لگائی جائے یہ باتیں ضلعی صدر انجمن تاجران سردار علاؤالدین خان مزاری نے میڈیا نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہیں اُن کا کہنا تھا کہ محکمہ خوراک اور فلور ملز مالکان کی ملی بھگت سے شہری آٹے سے محروم ہورہے ہیں اور چاول کاآٹا خرید نے پر مجبور ہیں اُنہوں نے صوبائی وضلعی انتظا میہ سے اس صورت حال پرقابو پانے کا مطا لبہ کیا ہے صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ پنجاب محمد جہانزیب خان کھچی نے کہا ہے کہ آٹے کے خود ساختہ بحران پر فوری نوٹس لیا گیا ہے جس کے بعد آٹے کی سپلائی کی صورتحال میں بہتری آ چکی ہے اور حکومت کے پاس وافر مقدار میں گندم موجود ہے اس لیئے کسی بحران کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔

آٹا بحران

مزید : ملتان صفحہ آخر