ایگزیکٹو انجینئر رحیم یار خان ڈویژن کیخلاف کارروائی کی ہدایت

  ایگزیکٹو انجینئر رحیم یار خان ڈویژن کیخلاف کارروائی کی ہدایت

  



بہاول پور(بیورورپورٹ) مسٹر جسٹس شاہدبلال حسن نے پنجاب انفارمیشن کمیشن کوڈائریکشن جاری کرتے ہوئے کہاہے کہ ایگزیکٹو انجینئررحیم یارخان ڈویژن کیخلاف پنجاب ٹرانسپیرنسی اینڈرائٹ ٹوانفارمیشن ایکٹ کی خلاف ورزی کے(بقیہ نمبر33صفحہ7پر)

الزام میں کاروائی کی جائے اوردرخواست گزار شہری موسیٰ سعید کوانکوائری نمبر605/15 کے ریکارڈ کی مطلوبہ نقول فراہم کرائی جائیں۔ واضح رہے شہری کی رٹ پٹیشن میں بتایاگیاتھاکہ مجاز اتھارٹی سابق ڈائریکٹر اینٹی کرپشن بہاولپورمحمدعمران رضاعباسی نے انکوائری نمبر605/15 کوڈیپارٹمنٹل کرکے انکوائری کے مرکزی ملزم چوہدری عبدالستار ایگزیکٹو انجینئررحیم یارخان کینال ڈویژن کوہی انکوائری آفیسرمقررکردیاتھا۔ جس پرشہری نے انکوائری آفیسر کوانکوائری سے متعلق مزیدریکارڈ کی نقول فراہم کیے جانے کیلئے درخواست گزاری تھی کیونکہ اس ریکارڈ سے انکوائری آفیسرخود ملزم ثابت ہوتاہے اس لیے ایگزیکٹو انجینئرچوہدری عبدالستار نے مدعی انکوائری کونقول ریکارڈ انکوائری فراہم نہیں کی تھی۔ جس کی شکایت پنجاب انفارمیشن کمیشن کوکی گئی تھی واضح رہے پنجاب انفارمیشن کمیشن نے اس سے پہلے بھی موسیٰ سعید کی درخواست پرکاروائی کرکے ایگزیکٹو انجینئرکودس ہزار روپے جرمانہ سزاکرکے ریکارڈ کی نقول دالوائی تھی جن کے مطالعے کے بعد شہری نے زیرالتوا انکوائری کے مزید ریکارڈ کی نقول کی فراہمی کیلئے درخواست گزاری تھی۔ عدالت عالیہ نے چیف انفارمیشن کمیشن پنجاب لاہور کوہدایات جاری کی ہیں کہ ایگزیکٹو انجینئرکیخلاف پنجاب ٹرانسپیرنسی ایکٹ کے مطابق کاروائی کی جائے اورشہری کومطلوبہ نقول ریکارڈ کی فراہمی کویقینی بنایاجائے۔ رٹ پٹیشن کی پیروی مسزمدیحہ سعیدایڈووکیٹ نے

ہدایت

مزید : ملتان صفحہ آخر