ملازمین کی پروموشن کیخلاف ایف بی آر کی اپیل پر سماعت،سپریم کورٹ کامتعلقہ افسرکو آئندہ سماعت پر تفصیلات پیش کرنے کاحکم

ملازمین کی پروموشن کیخلاف ایف بی آر کی اپیل پر سماعت،سپریم کورٹ کامتعلقہ ...
ملازمین کی پروموشن کیخلاف ایف بی آر کی اپیل پر سماعت،سپریم کورٹ کامتعلقہ افسرکو آئندہ سماعت پر تفصیلات پیش کرنے کاحکم

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے ملازمین کی پروموشن کیخلاف ایف بی آر کی اپیل پر متعلقہ افسر کو آئندہ سماعت پر تمام تفصیلات پیش کرنے کاحکم دیدیا،جسٹس اعجازالاحسن نے کہا کہ وکیل صاحبہ!متعلقہ آفیسر کو ساتھ لے کرآئیں ،متعلقہ افسربتائے ملازمین کی پروموشن غیرقانونی دی توکیانتائج ہونگے ۔

میڈیارپورٹس کے مطابق سپریم کورٹ میں ملازمین کی پروموشن کیخلاف ایف بی آر کی اپیل پر سماعت ہوئی،چیف جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں بنچ نے سماعت کی،فروغ نسیم کی عدم موجودگی میں ایڈووکیٹ آن ریکارڈ محمود شیخ عدالت میں پیش ہوئے،جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ فروغ نسیم صاحب کو کہاتھامتبادل وکیل کریں،وکیل محمود شیخ نے کہاکہ فروغ نسیم کو پیغام بھجوایا ہے ۔

چیف جسٹس گلزاراحمد نے کہا کہ 3 دفعہ مقدمہ ملتوی کرچکے ہیں اب نہیں کریں گے ،وکیل ایف بی آر نے کہاکہ مقدمہ ملتوی نہ کیا جائے ،جلد سماعت کی درخواست دائر کرکے مقدمہ لگوایا ،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ اس میں چھوٹے ملازمین کاکردارنہیں ساراکام ایف بی آر افسروںنے خراب کیا،وکیل ایف بی آر نے کہا کہ ملازمین پروموشن کے فوائد حاصل کررہے ہیں کوئی زیادتی نہیں ہوگی ،جسٹس اعجازالاحسن نے کہا کہ وکیل صاحبہ!متعلقہ آفیسر کو ساتھ لے کرآئیں ،متعلقہ افسربتائے ملازمین کی پروموشن غیرقانونی دی توکیانتائج ہونگے ۔

چیف جسٹس گلزاراحمد نے کہا کہ چھوٹے چھوٹے ملازم ہیں ان کاکیاکردار ہوسکتا ہے؟،افسروں سے پوچھیں پابندی کے بعدکیسے پروموشن اورتعیناتی ہوئی؟ ،چیف جسٹس نے استفسار کیاکہ جس نے پابندی کے باوجودتعیناتی کی وہ افسر کون تھا؟افسروںکوچھوڑیں چیئرمین ایف بی آر کو طلب کرلیتے ہیں ۔

سپریم کورٹ نے متعلقہ افسر کو آئندہ سماعت پر تمام تفصیلات پیش کرنے کاحکم دیتے ہوئے ملازمین کی پروموشن کیخلاف ایف بی آر کی اپیل پر سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کردی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد