فیصل واوڈا کی جانب سے پروگرام میں بوٹ لانے پر صحافی کاشف عباسی کا موقف بھی سامنے آ گیا

فیصل واوڈا کی جانب سے پروگرام میں بوٹ لانے پر صحافی کاشف عباسی کا موقف بھی ...
فیصل واوڈا کی جانب سے پروگرام میں بوٹ لانے پر صحافی کاشف عباسی کا موقف بھی سامنے آ گیا

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں اپنے ہمراہ ایک کالے رنگ کا بوٹ بھی لے آئے جسے انہوں نے ٹیبل پر سجایا اور اپوزیشن پر تنقید شروع کر دی تاہم اس دوران کی گفتگو بھی سخت رہی جس پر پیمرا نے پروگرام اور صحافی پر 60 روز کی پابندی عائد کر دی ہے تاہم گزشتہ رات کے ایک پروگرام میں کاشف عباسی نے اس پرا پناموقف بھی جاری کر دیاہے

تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی کاشف عباسی نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں شرکت کی جہاں تجزیہ نگار عارف حمید بھٹی نے گفتگو کا آغاز کرتے ہوئے کہا کہ ”میں بھی کئی بار آپ کے پروگرام میں آیاہوں اور اکثر سیاسی شخصیت آتی ہے تو اس کے ہاتھ میں بیگ ہوتاہے ہم تلاشی نہیں لیتے ، آج شور مچا ہواہے کہ کاشف عباسی کو بوٹ کیوں نظر نہیں آیا ، اگر میرے پروگرام میں کوئی مہمان آتاہے اور اس کے ہاتھ میں کوئی بیگ ہے تو میں اس کی تلاشی تو نہیں لوں گا ،یہ بھی بات ہو رہی ہے کہ آپ کے دو مہمان اٹھ کر چلے گئے اور آپ نے انہیں روکا نہیں ۔“

سینئر صحافی کاشف عباسی نے اس کے آگے بات کرتے ہوئے کہا کہ آپ بالک ٹھیک کہہ رہے ہیں کہ میں نے انہیں نہیں روکا کیونکہ میں گارنٹی نہیں دے سکتا کہ فیصل واوڈا اگلے ہی لمحے کونسے جملے ادا کریں گے ، میں آپ کی سکرین پر ہوں کیا آپ کی ٹیم نے آکر دیکھاہے کہ میرے دائیں اور بائیں کیا پڑا ہے ،یا میرے پاس کوئی بندوق ہے ، یہ باتیں اور ڈرامے وہ لوگ زیادہ کرتے ہیں جو باہر کر بیٹھ کر کہتے ہیں نہیں نہیں اس کو یہ دیکھنا چاہیے تھا ۔

کاشف عباسی کا کہناتھا کہ مجھے 12سال پروگرام کرتے ہوئے ہو گئے ہیں ،آج تک ہم نے یہ نہیں کیا کہ وفاقی وزیر آرہاہے اور اس کے ہاتھ میں بیگ ہے تو اسے کہوں کہ بیگ کھول کر دکھاﺅں ، ایساکون کر سکتاہے ،وہ وفاقی وزیر ہے یا سینئر سیاسی شخصیت ہیں ، یہ ایک بنیادی اعتبار ہے ۔ان کا کہناتھا کہ میں نے 12 سال میں ہزاروں پروگرام کیے ہوں گے ،میں ہزاروں پروگرام میں لوگوں کے بیگ پر شک کرتارہوں گا کہ وہ بیگ میں کیا رکھ کر لائیں ہیں، ایسے نہیں ہوتا ۔

مزید : قومی


loading...