بچی اغوا کیس،سرفراز بگٹی کی ضمانت منسوخ،احاطہ عدالت سے گرفتار،سینیٹر کی تردید

بچی اغوا کیس،سرفراز بگٹی کی ضمانت منسوخ،احاطہ عدالت سے گرفتار،سینیٹر کی ...
بچی اغوا کیس،سرفراز بگٹی کی ضمانت منسوخ،احاطہ عدالت سے گرفتار،سینیٹر کی تردید

  



کوئٹہ (ڈیلی پاکستان آن لائن)کوئٹہ کی سیشن عدالت نے بچی اغوا کیس میں سینیٹر سرفرازبگٹی کی ضمانت منسوخ کردی اورپولیس کوگرفتار کرنے کا حکم دیدیا۔پولیس نے سینیٹر سرفراز بگٹی کو احاطہ عدالت سے گرفتارکرکے تھانے منتقل کردیا۔جبکہ سینیٹر سرفراز بگٹی نے بچی اغوا کیس میں گرفتاری کی تردید کرتے ہوئے کہاہے کہ میں مقدمے میں ضمانت کے حوالے سے بلوچستان ہائیکورٹ میں موجود ہوں،میڈیا کو اپنی بریکنگ نیوز چلانے سے پہلے تسلی کرلینی چاہئے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق کوئٹہ کی سیشن عدالت میں بچی اغوا کیس کی سماعت ہوئی، سینیٹر سرفراز بگٹی عدالت میں پیش ہوئے،ایڈیشنل سیشن جج 9 کی عدالت نے سینیٹر سرفراز بگٹی کی ضمانت منسوخ کردی اورپولیس کو سینیٹر کو گرفتار کرنے کا حکم دیدیا،ضمانت منسوخ ہونے پر پولیس نے سرفرازبگٹی کو گرفتارکرلیااورتھانے منتقل کردیا ۔

جبکہ سینیٹر سرفراز بگٹی نے ٹوئٹر پر اپنی گرفتاری کی تردید کرتے ہوئے کہاہے کہ میں مقدمے میں ضمانت کے حوالے سے بلوچستان ہائیکورٹ میں موجود ہوں، میڈیا کو اپنی بریکنگ نیوز چلانے سے پہلے تسلی کرلینی چاہئے۔

واضح رہے کہ ڈیرہ بگٹی کے رہائشی شخص توکل کا اپنے سسرال والوں سے بچی کا تنازع تھا،عدالت نے بچی کووالدکے حوالے کرنے کا حکم دیاتھا ،اس کے بعدوہ شخص بچی کو لے کر فرارہوگیا ،بچی کے ماموں نے بازیابی کیلئے تھانے میں درخواست میں دائر کررکھی تھی جس میں توکل نامی شخص سمیت سرفراز بگٹی کو نامزدکیا گیاتھا،بچی کے ماموں کاکہناتھا کہ بچی کو سرفراز بگٹی کے گھر کینٹ لے جایا گیا وہاں سے ڈیرہ بگٹی منتقل کردیاگیا،سینٹر سرفراز بگٹی نے حفاظت ضمانت کرارکھی تھی ،آج ضمانت منسوخ ہونے پرپولیس نے انہیں گرفتارکرلیا۔یادرہے کہ توکل نامی شخص نے کچھ عرصہ قبل اپنی بیوی کو بھی قتل کردیاتھا،بعدمیں صلح ہونے پرسسرال والوں نے معاف کردیاتھا۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /بلوچستان /کوئٹہ