افغان امن عمل میں اہم پیش رفت ،طالبان نے پرتشدد رویوں میں کمی کے مطالبے پر آمادگی ظاہر کردی

افغان امن عمل میں اہم پیش رفت ،طالبان نے پرتشدد رویوں میں کمی کے مطالبے پر ...
افغان امن عمل میں اہم پیش رفت ،طالبان نے پرتشدد رویوں میں کمی کے مطالبے پر آمادگی ظاہر کردی

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ افغان امن عمل کے معاملے پر ایک اچھی اور اہم پیش رفت سامنے آئی ہے، طالبان نے پرتشدد رویوں میں کمی کے مطالبے پر آمادگی ظاہر کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے افغان امن عمل پر پیشرفت کے حوالے سے اپنے بیان میں کہا ہے کہ کچھ عرصے سے امریکا اور افغانستان کے مذاکرات جاری تھے، پاکستان خواہشمند تھا مذاکرات پر کوئی پیش رفت ہو۔شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ سمجھتے ہیں پاکستان، افغانستان اور خطے کو امن و استحکام کی ضرورت ہے، آج اس سلسلے میں ایک اچھی پیش رفت سامنے آئی ہے، پرتشدد رویوں میں کمی کے مطالبے پر طالبان نے آمادگی ظاہر کردی ہے۔

انہوں نے کہا کہ سمجھتا ہوں کہ اس سے امن معاہدے کی طرف پیشرفت ہوئی۔ خوشی اس بات کی ہے کہ پاکستان نے مصالحانہ ذمہ داری کو بہ عافیت نبھایا۔وزیر خارجہ کا مزید کہنا تھا کہ ہماری خواہش ہے خطے میں امن قائم ہو اور اس امن کا فائدہ افغانستان اور پاکستان کے عوام کو بھی ہو۔

خیال رہے کہ وزیر خارجہ 3 روزہ دورے پر امریکا میں موجود ہیں جہاں انہوں نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انتونیو گتریس سے ملاقات کی۔وزیر خارجہ نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل کو مشرق وسطیٰ میں کشیدگی میں کمی کے لیے پاکستان کے اقدامات سے آگاہ کیا، اس سلسلے میں انہیں دورہ ایران اور سعودی عرب سے متعلق تفصیلات بتائی گئیں۔وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ مشرق وسطیٰ کسی نئی محاذ آرائی کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ انتونیو گتریس نے قیام امن کے لیے پاکستان کے مثبت کردار کی بھی تعریف کی۔

مزید : اہم خبریں /قومی


loading...