گوادر کے توسط سے چمن سب سے قابل فہم کنکشن, گوادر بندرگاہ کا آغاز ہمیشہ ہمارابنیادی  مطالبہ رہا ہے :زبیر موتی والا

گوادر کے توسط سے چمن سب سے قابل فہم کنکشن, گوادر بندرگاہ کا آغاز ہمیشہ ...
گوادر کے توسط سے چمن سب سے قابل فہم کنکشن, گوادر بندرگاہ کا آغاز ہمیشہ ہمارابنیادی  مطالبہ رہا ہے :زبیر موتی والا

  



کراچی(صباح نیوز)پاکستان افغانستان جوائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری ( پی اے جے سی سی آئی)کے چیئرمین زبیر موتی والا نے افغانستان کی راہداری کو سنبھالنے کے لئے گوادر بندرگاہ کے آپریشنل ہونے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ متبادل اختیارات کی فراہمی کے ذریعہ کاروبار کرنے میں آسانی کو پورا کیا جاسکتا ہے اور گوادر بندرگاہ کا آغاز ہمیشہ ہمارابنیادی  مطالبہ رہا ہے ، جس کی تکمیل سے وسیع تر معاشی استحکام پیدا ہوگا  اور کاروباری برادری کے لئے وسیع مواقع میسر آئیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ گوادر کے توسط سے چمن سب سے قابل فہم کنکشن ہے ، انفراسٹرکچر ، سیکیورٹی خدشات اور پالیسی پر عمل درآمد کے معاملات میں بھی بہتری کی ضرورت ہے تاکہ  فوائد کو پوری طرح سے فائدہ اٹھایا جا سکے۔زبیر موتی والانےاس بات کا اعادہ کیا کہ گوادر بندرگاہ پر پہلی بار سامان افغانستان کے لئے پہنچنا ایک اہم پیشرفت ہے اور اب وقت آگیا ہے کہ اس نئے تیار کردہ متبادل ذرائع سے فائدہ اٹھائیں ۔اُنہوں نے وزیر اعظم پاکستان کے وژن کا انتہائی اعتراف کیا جو پوری طرح سے افغانستان کے ساتھ خصوصی طور پر ٹرانزٹ حکومت کے لئے تجارت کے پیرامیٹرز کو بہتر بنانے پر گہری توجہ مرکوز ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پی اے جے سی سی آئی ہمیشہ اقتصادی استحکام اور علاقائی رابطے کے لئے تجارت اور راہداری کی سہولت فراہم کرنے کا ایک مضبوط حامی رہا ہے،گوادر بندرگاہ پر بلک کارگو کو سنبھالنے کی کامیابی سے دوسری بندرگاہوں پر موجود کارگوکے مسائل کو بہتر بنانے کی راہ ہموار ہوگی اور اس سے مسابقتی زمین کی تزئین کو بھی فروغ ملے گا جو گھریلو اور بین الاقوامی دونوں گاہکوں کے لئے مناسب قیمت ، اعلی معیار کی خدمات کی فراہمی کو یقینی بنائے گا۔زبیرموتی والا نے کہا کہ  بلاشبہ  پاکستان جغرافیائی طور پر اچھی طرح سے ناقابل منتقلی بندرگاہ والے مقامات پر مشتمل ہے جسے بین الاقوامی معیار کی خدمات تک رسائی فراہم کرکے ان کو بڑھایا جاسکتا ہے۔

مزید : بزنس