سپین کے وزیر صحت نے ملک میں مکمل لاک ڈاؤن کا امکان رد کردیا

سپین کے وزیر صحت نے ملک میں مکمل لاک ڈاؤن کا امکان رد کردیا
سپین کے وزیر صحت نے ملک میں مکمل لاک ڈاؤن کا امکان رد کردیا

  

بارسلونا (ارشد نذیر ساحل ) سپین کے وفاقی وزیرصحت سلوادور اییا نے سخت لاک ڈاؤن کے امکان کی نفی کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت پراعتماد ہے کہ وہ لاک ڈاون لگائے بغیر وائرس کی تیسری لہر پر قابو پا لے گی۔ حالات کے مطابق صوبوں کی جانب سے مکمل لاک ڈاؤن کیلئے کی گئی درخواستوں کا جائزہ بھی لیا جائے گا لیکن تاحال اس کا امکان موجود نہیں ہے۔

ہسپانوی وزیر صحت نے بتایا کہ  سپین کے کچھ علاقوں اندولوسیا، مرسیا، کاستیا لیون، استوریہ کی جانب سے مرکزی حکومت کو مکمل لاک ڈاؤن کے لئے درخواست دی گئی تھی۔ صوبوں کی جانب سے موقف اختیار کیاگیاتھاکہ کورونا وائرس کیسز میں اضافہ ہوتاجارہا ہے، مرکزی حکومت لاک ڈاؤن لگانے کی اجازت دے۔

وزیرصحت نے تسلیم کیا کہ وباء کی صورتحال تشویشناک ہے۔ ہسپتالوں میں مریضوں کا دباؤ بڑھتا جارہاہے تاہم موجودہ اقدامات کے ذریعے وائرس کے پھیلاؤ پر قابو پایاجائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ ویکسین لگانے کا عمل جاری ہے اور گرمیوں تک سپین کی 70 فیصد آبادی کو ویکسین لگا دی جائے گی۔

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -