سانحہ ماڈل ٹاﺅن، اندراج مقدمہ کی درخواست پر مشترکہ تحقیقاتی ٹیم پر ریکارڈطلب

سانحہ ماڈل ٹاﺅن، اندراج مقدمہ کی درخواست پر مشترکہ تحقیقاتی ٹیم پر ...

لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج صفدر علی بھٹی نے عوامی تحریک کی جانب سے سانحہ ماڈل ٹاﺅن واقعہ کا مقدمہ وزیر اعلی پنجاب،خواجہ سعد رفیق،سابق وزیر قانون رانا ثناءاللہ سمیت 21افراد کے خلاف درج کروانے کی درخواست پر19جولائی تک ملتوی کرتے ہوئے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم سے ریکارڈ طلب کر لیاہے۔فاضل عدالت میں گزشتہ روز مذکورہ درخواست کی سماعت ہوئی ۔عوامی تحریک کے رہنماءجواد حامد کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ ماڈل ٹاون واقعہ وزیر اعلی اور (ن)لیگ کی قیادت کے ایماءپر کیا گیا۔اس واقعہ میں کئی معصوم جانیں گئیں اور درجنوں افراد زخمی ہوئے۔انہوں نے کہا کہ پولیس نے متاثرہ افراد کی درخواست پر مقدمہ درج کرنے کی بجائے پولیس کی مدعیت میں مقدمہ درج کر لیا اور اس کے ذریعے اصل ملزمان کو تحفظ فراہم کیا جا رہا ہے۔تھانہ فیصل ٹاون کے ایس ایچ او کی جانب سے پولیس کی مدعیت میں درج مقدمے کی ایف آئی آر عدالت میں پیش کرتے ہوئے موقف اختیار کیا گیا کہ مزید ایف آئی آر کی ضرورت نہیں۔عدالتی استفسار پر ایس ایچ او نے کہا کہ مقدمے کا تمام ریکارڈجوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم کے پاس ہونے کی بناءپر پیش نہیں کیا جا سکتاجس پر عدالت نے کیس کی مزیدسماعت انیس جولائی تک ملتوی کرتے ہوئے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم سے مقدمے کا تمام ریکارڈ آئندہ سماعت پر طلب کر لیاہے۔

ریکارڈطلب

مزید : صفحہ آخر