آزادی مارچ ہر صورت ہوگا، عمران خان کی گرفتاری پر تحریک انصاف نے شدید ردعمل کا منصوبہ تیار کر لیا

آزادی مارچ ہر صورت ہوگا، عمران خان کی گرفتاری پر تحریک انصاف نے شدید ردعمل کا ...
آزادی مارچ ہر صورت ہوگا، عمران خان کی گرفتاری پر تحریک انصاف نے شدید ردعمل کا منصوبہ تیار کر لیا

  

 اسلام آباد(ما نیٹر نگ ڈیسک )تحریک انصاف کی کور کمیٹی نے پورا الیکشن کھولنے کے عمران خان کے موقف کی توثیق کرتے ہوئے متفقہ طور پر14 اگست کو آزادی مارچ کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے ،کمیٹی نے عمران خان سمیت مرکزی قیادت کی گرفتاری پر شدید رد عمل کا منصوبہ بھی تیار کر لیا اور اس مقصد کے لیے خصوصی کمیٹیاں بھی تشکیل دے دی گئیں ہیں ۔ تفصیلات کے مطابق کور کمیٹی کا اجلاس چیئرمین عمران خان کی صدارت میں بنی گالا میں ہوا۔ اجلاس کے دوران کمیٹی نے اس بات پر اتفاق کیا ہے کہ 14 اگست کو آزادی مارچ ہر صورت میں ہوگا۔ عمران خان کی صدارت میں مرکزی قافلہ لاہور سے براستہ جی ٹی روڑ اسلام آباد پہنچے گاجبکہ چاروں صوبوں سے قافلے مختلف راستوں سے وفاقی دارالحکومت میں پہنچیں گے۔ اجلاس میں عمران خان کی نظر بندی کی صورت میں شدید رد عمل کی منصوبہ بندی تیار کر لی گئی، اسکے علاوہ حکومتی رکاوتوں اور کارکنوں کی ممکنہ گرفتاریوں سے نمٹنے کا پلان بھی تیارکیا گیا ہے۔کور کمیٹی نے باہمی مشاورت سے مارچ کے انتظامات کے لیے چار کمیٹیاں تشکیل دیدی اور سیف اللہ نیازی کومارچ کے کوآرڈینیٹر مقرر کیاگیا ہے۔اجلاس میں پارٹی کے صوبائی صدور کو تحصیل ، یونین کونسل اور ضلعی تنظیموں کو متحرک کرنے کی زمہ داریاں سونپی گئی ہیں جبکہ عمران خان نے شا ہ محمود قریشی اور جاوید ہاشمی کو پنجاب کے کارکنوں کو متحرک کرنے کاہدف سونپ دیا ہے ۔ذرائع کے مطابق عمران خان 22 جولائی سے آزادی مارچ کی تیاریوں کی براہ راست نگرانی شروع کریں گے۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں