حکومت نے دہشتگردوں کے مکمل خاتمے کی منصوبہ بندی کرلی

حکومت نے دہشتگردوں کے مکمل خاتمے کی منصوبہ بندی کرلی
حکومت نے دہشتگردوں کے مکمل خاتمے کی منصوبہ بندی کرلی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور (ویب ڈیسک) حکومت نے وزیرستان اور دیگر قبائلی علاقوں میں آپریشن کے بعد ملک کے بندوبستی علاقوں میں بھی بڑے پیمانے پرآپریشن کا فیصلہ کرلیا گیاہے اور  دہشت گردوں کو شہروں اور قصبہ جات میں چھپنے کی جگہ، اسلحہ، ریکی ، رقم اور ٹھکانے فراہم کرنےوالے  مدد گاروں کےخلاف بھی کارروائی ہوگی ۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ بیک وقت چاروں صوبوں میں سول اور حساس اداروں کے اشتراک سے ٹارگٹڈ آپریشن کیا جائے گا جس کے لیے فرقہ وارانہ دہشتگردی کو فروغ دینے میں ملوث مدارس اور لٹریچر کے حوالے سے بھی مکمل معلومات حاصل کی گئی ہیں ۔اسکے علاوہ ان اداروں کیخلاف آپریشن اور جوابی احتجاج کے بارے میں بھی حکمت عملی بنا لی گئی ہے.

حکومتی  ذرائع کے مطابق وزیراعظم نواز شریف اپنے معاشی ایجنڈے پر مکمل عملدر آمد کے لیے ملک سے ہر قسم کی دہشتگردی کا خاتمہ چاہتے ہیں اور اسی لیے حکومت نے چاروں صوبوں کے دیہی اور شہری بندوبستی علاقوں کے دہشت گردی اور فرقہ پرستی میں ملوث مدارس اور اداروں کے خلاف کارروائی کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

مزید : قومی