اسرائیلی طیاروں کی غزہ میں پھر بمباری، 4 فلسطینی بچے شہید

اسرائیلی طیاروں کی غزہ میں پھر بمباری، 4 فلسطینی بچے شہید
اسرائیلی طیاروں کی غزہ میں پھر بمباری، 4 فلسطینی بچے شہید

  

غزہ (مانیٹرنگ ڈیسک) مظلوم فلسطینیوں پر اسرائیلی جارحیت کا سلسلہ بدستور جاری ہے اور تازہ حملے میں مزید 4 فلسطینی بچے شہید ہو گئے ہیں اور آج شہادتوں کی مجموعی تعداد 12 ہو گئی ہے۔ غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق غزہ کے علاقے میں اسرائیلی طیاروں کی بمباری کے نتیجے میں 4 بچے شہید ہوئے۔ قبل ازیں مصر کی جنگ بندی اور قاہرہ میں مذاکرات کی پیشکش پر چھ گھنٹے کی جنگ بندی کے بعد اسرائیلی فورسز نے دوبارہ بمباری کا آغاز کر دیا تھا اور جنوبی علاقوں میں بمباری سے 4 جبکہ رفاہ میں ایک گھر پر بمباری سے 2 فلسطینی شہید ہوگئے تھے جس کے بعد مجموعی طورپرشہادتوں کی تعداد 213 ہو گئی ہے۔ اسرائیلی فوج کی بربریت کے نتیجے میں اب تک سینکڑوں گھر ملبے کا ڈھیر بن گئے ہیں جبکہ اسرائیلی فوج نے شمالی غزہ کے ایک لاکھ مکینوں کوعلاقہ چھوڑنے کا حکم دیدیا۔اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہوکاکہناتھاکہ حماس نے جنگ کا انتخاب کیاجسے اس کی بھاری قیمت چکاناہوگی ، سرحد پر تعینات فوج کسی بھی وقت غزہ میں زمینی کارروائی کرسکتی ہے۔دوسری جانب پاکستان سمیت دنیاکے مختلف ممالک میں اسرائیلی جارحیت اور غزہ میں معصوم شہریوں کی ہلاکتوں کے خلاف احتجاج جاری ہے۔ پاکستان میں کراچی اور سکھر کے وکلاءنے عدالتوں کا بائیکاٹ اور فلسطینیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے ریلیاں نکالیں، طلباءنے بھی احتجاج کیا۔ مظاہرین نے مطالبہ کیاکہ اقوام متحدہ اسرائیل کی رکنیت ختم کرے اوراس کے خلاف جنگی جرائم کے مقدمات قائم کرے۔

مزید : بین الاقوامی /اہم خبریں