رہا کئے گئے امریکی فوجی کا والدین سے بات کرنے سے انکار

رہا کئے گئے امریکی فوجی کا والدین سے بات کرنے سے انکار
رہا کئے گئے امریکی فوجی کا والدین سے بات کرنے سے انکار

  

واشنگٹن(نیوز ڈیسک )طالبان کی قید میں پانچ سال گزرنے کے بعد حال ہی میں رہا کروائے گئے امریکی فوجی برری برگڈال کے بارے میں انکشاف ہوا ہے کہ اس نے رہائی کے بعد اپنے والدین سے ملنے یا بات کرنے سے انکار کر دیا اور اب تک ان سے ایک دعفہ بھی بات نہیں کی ہے۔برگڈال کو مئی میں پانچ طالبان قیدیوں کے بدلے رہا کروایا گیا تھا۔اگرچہ ابھی اس کے بارے میں واضح اطلاعات نہیں ہیں کہ برگڈال اپنے یہودی والدین سے اس قدر ناراض کیوں ہے لیکن یہ بات واضح ہے کہ اس کی قید کے دوران اس کا والد اس کی رہائی کیلئے بہت سرگرم رہا برگڈال کی قید اور رہائی کا معاملہ امریکی حکومت کیلئے ایک مسئلے کی صورت اختیار کر چکا ہے کیونکہ اس کے کچھ ساتھی اسے غدار قرار دے چکے ہیں جبکہ امریکی فوج نے اسے دوبارہ بھرتی کر لیا ہے اور اس کے ذمہ ایک دفتری کام لگایاگیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی