دنیا کا معمر ترین ہونے کا دعویٰ کرنے والا شخص

دنیا کا معمر ترین ہونے کا دعویٰ کرنے والا شخص
دنیا کا معمر ترین ہونے کا دعویٰ کرنے والا شخص

  

ساﺅپالو (نیوز ڈیسک) برازیل میں روزانہ ایک ڈبی سگریٹ پینے اور کبھی نہ نہانے والے ایک بزرگ نے دعویٰ کردیا ہے کہ وہ دنیا کا معمر ترین شخص ہے۔ ہوزے اگوائنو نامی بزرگ کو حال ہی برتھ سرٹیفکیٹ جاری کیا گیا ہے جس کے مطابق اس کی عمر 126 سال ہوچکی ہے۔ اس شخص کا کہنا ہے کہ اس کے والدین افریقی غلام تھے اور اس کی پیدائش جولائی 1888ءمیں ہوئی۔ ہوزے نے ساری عمر شادی نہیں کی، وہ روزانہ چار دفعہ کھانا کھاتا ہے، بغیر کسی سہارے کے چلتا ہ ے، پچھلے 50 سال سے روزانہ ایک ڈبی سگریٹ پیتا ہے اور نہانے کے قریب بھی نہیں جاتا ہے۔ اس کی پیدائش برازیل کے پیڈرابرانکا نامی قصبے میں ہوئی جب پہلی جنگ عظیم شروع ہوئی تو وہ 26 سال کا تھا۔ اس نے زندگی کا زیادہ تر حصہ ساﺅ پالو کے قصبہ باﺅرو میں کافی کے کھیتوں میں کام کرتے ہوئے گزارا اور آج کل اسی قصبہ میں بزرگ شہریوں کیلئے بنائے گئے مرکز میں رہتا ہے۔ مرکز کی ماہر نفسیات ماریانا کا کہنا ہے کہ وہ بہت زندہ دل ہے اور گانے گا کر اور لطیفے سنا کر سب کو خوش کرتا ہے۔ اس کی صحت اچھی ہے اور اسے کوئی بیماری نہیں ہے۔ مرکز کے سربراہ کا کہنا ہے کہ وہ کاربن ڈیٹنگ کے مہنگے ٹیسٹ کو استعمال کرتے ہوئے ہوزے کی عمر کی تصدیق کریں گے تاکہ یہ ثابت ہوجائے کہ وہ دنیا کا معمر ترین شخص ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس