ننگے پاﺅں گھاس پر چلنا انتہائی مفید

ننگے پاﺅں گھاس پر چلنا انتہائی مفید
ننگے پاﺅں گھاس پر چلنا انتہائی مفید

  

ممبئی (بیورونیوز ) یہ بات ہر کوئی جانتا ہے کہ صبح اور شام کے وقت گھاس پر ننگے پاﺅں چلنا عمومی صحت اور خصوصاً آنکھوں کی بینائی کے لئے نہایت مفید ہے، لیکن کیا آپ نے یہ جاننے کی کوشش کی ہے کہ ایسا کیوں ہوتا ہے؟ لہذا یہاں ہم آپ کو گھاس پر پیدل چلنے کی 5 وجوہات بتانے جا رہے ہیں، جو آپ کے جسم اور دماغ کے لئے نہایت نفع بخش ہیں۔

ذہنی سکون: صبح کے وقت تازہ ہوا، سورج کی روشنی اور پُرسکون ماحول آپ کی مختلف طریقوں سے مدد کرتا ہے۔ تازہ آکسیجن آپ کے جسم کی کارکردگی کو بہتر بناتی ہے، سورج کی روشنی آپ کو گرم رکھتی ہے اور روشنی سے حاصل وٹامن ڈی ہڈیاں مضبوط بناتی ہے اور پُرسکون ماحول آپ کے تمام جسم اور دماغ کو سکون فراہم کرتا ہے۔

جسمانی تحریک: پاﺅں ایک سٹور ہاﺅس کی حیثیت رکھتے ہیں، جو آنکھوں، کانوں، جگر، اعصابی نظام، معدے، گردے اور دماغ سمیت جسم کے تمام اعضاءسے ربط رکھتے ہیں۔ اور طبی ماہرین کے مطابق پاﺅں میں تحریک پیدا کرنے سے سارے جسم پر مثبت اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

الیکٹریکل شعاعوں کا اثر زائل کرنا: بھارت کے معروف کنسلٹنٹ نیچروپیتھی ڈاکٹر انجالی شرما کہتے ہیں کہ نیچروپیتھی کے ذریعے علاج میں 5 اقسام کے قدرتی علاج شامل ہیں اور مقناطیسی صلاحیت رکھنے کے باعث زمین ان میں سے ایک اہم عنصر ہے۔ اور یوں جب ہم زمین پر ننگے پاﺅں چلتے ہیں تو ہم مکمل طور پر زمین کے مقناطیسی نظام سے جڑ جاتے ہیں، اور اس جڑاﺅ کی وجہ سے ہمارے جسم کے الیکٹریکل اور میگنیٹک شعاعوں کا اثر زائل ہو جاتا ہے۔

سورج کی دھوپ جذب کرنا: صبح کے وقت گھاس پر چلنے کے دوران ہم اپنے جسم کو جو سب سے بڑا تحفہ دیتے ہیں وہ سورج کی روشنی میں شامل توانائی ہوتی ہے۔ ڈاکر شرما کے مطابق سورج کی روشنی جسمانی توانائی میں اضافہ اور بحالی کے لئے نہایت مفید ہے۔

وٹامن ڈی کی کمی خاتمہ: دور حاضر میں ہڈیوں اور جوڑوں کے امراض کی وجہ سے آج کروڑوں افراد پریشانی کا شکار ہیں، اور یہ پریشانی جسم میں وٹامن ڈی کی کمی کے باعث لاحق ہوتی ہے۔ ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ جب ہم صبح سویرے سیر کرتے ہیں تو سورج کی روشنی جسم میں وٹامن ڈی کی کمی کو پورا کر دیتی ہے۔

مزید : تعلیم و صحت