روس نے ہمسایہ ملک ’کھانا‘ شروع کردیا

روس نے ہمسایہ ملک ’کھانا‘ شروع کردیا
روس نے ہمسایہ ملک ’کھانا‘ شروع کردیا

  

تبلیسی(مانیٹرنگ ڈیسک) روس اپنا شیرازہ بکھرنے کا سانحہ آج تک نہیں بھول پایااور آج بھی ٹکڑے سمیٹنے کی خواہش دل میں لیے ہوئے ہے، اسی لیے کبھی یوکرائن پر حملہ کرکے اسے اپنے ساتھ ملانے کی کوشش کرتا تو کبھی کسی دوسرے ملک(سابق روسی ریاست) کا بارڈر تنگ کرنا شروع کر دیتا ہے۔

مزید پڑھیں:روس کی وہ تہلکہ خیز ایجاد جس نے عالمی طاقتوں کی نیندیں اڑادیں

اس بار جارجیا نے الزام عائد کیا ہے کہ روس اس کی حدود میں گھس کراس کی سر زمین کو اپنا حصہ بنا رہا ہے۔ جارجین حکام کا کہنا ہے کہ روس جنوبی اوسیشیا کے علاقے میں بین الاقوامی بارڈرکی خلاف ورزی کر رہا ہے۔ اس علاقے میں انٹرنیشنل آئل پائپ لائن موجود ہے جو اب روس کے کنٹرول میں ہے۔ دراصل 2008ء میں روس اور جارجیا میں ایک جنگ کے نتیجے میں روس نے یہ علاقہ فتح کیا تھا، اس علاقے میں روسی افواج کے اڈے موجود ہیں لیکن امریکہ سمیت بہت سے مغربی ممالک اب بھی اس علاقے کو جارجیا کا حصہ سمجھتے ہیں۔لیکن اب روسی افواج اس مقبوضہ خطے پر بارڈر کی تاریں اور جنگلے نصب کر رہی ہیں لیکن جارجین حکام کا کہنا ہے کہ روسی افواج جارجیا کے مزید ڈیڑھ کلومیٹر اندر بارڈر بنا رہی ہیں۔واضح رہے کہ روس کی طرف سے جارجیا کے الزام پرتاحال کوئی ردعمل سامنے نہیں آیا۔

مزید :

بین الاقوامی -