ہائی کورٹ :باٹا پور میں کوئلے کی بجلی گھر کے خلاف حکم امتناعی جاری ،مزید سماعت لارجر بنچ کرے گا

ہائی کورٹ :باٹا پور میں کوئلے کی بجلی گھر کے خلاف حکم امتناعی جاری ،مزید ...
ہائی کورٹ :باٹا پور میں کوئلے کی بجلی گھر کے خلاف حکم امتناعی جاری ،مزید سماعت لارجر بنچ کرے گا

  

لاہور (نامہ نگار خصوصی) لاہور ہائیکورٹ نے باٹا پور میں کوئلے سے بجلی پیدا کرنے کے پلانٹ پر حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے درخواست پر لارجر بنچ بنانے کی سفارش کر دی ، لارجر بنچ تشکیل دینے کے لئے اسی نوعیت کی تمام درخواستیں چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کو بجھوا دی گئی ہیں، مسٹر جسٹس شاہد کریم نے محمد اعجاز، جمیل، ارشد محمود، عادل ارشد، محمد عظمان اور محمدشفیق کی درخواستوںپر سماعت شروع کی تو درخواست گزاروں کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ کلکٹر لاہور نے 10 جون کو لینڈ ایکوزیشن ایکٹ 1894 ءکی دفعہ 4کے تحت موضع کھیڑا اور سلطان پور میں واقع 1188 کنال اور 5مرلے اراضی ایکوائر کرنے کا نوٹیفیکیشن جاری کیا ہے، انہوں نے عدالت کو بتایا کہ مذکورہ اراضی پنجاب پاور ڈویلپمنٹ کمپنی لمیٹڈ حاصل کرنا چاہ رہی ہے جس کا مقصد باٹا پور کے علاقے میں کوئلے کے چھوٹے پاور پلانٹس لگانا ہے ، انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ باٹا پور اور سلطان پور موضع میں 12لاکھ سے زائد افراد رہائش پذیر ہیں اور حکومت کی جانب سے لگایا جانے والا پراجیکٹ ان شہریوں کی صحت اور زندگیوں کے لئے بڑا خطرہ ہے جو کہ آئین میں دیئے گئے بنیاد حقوق کے آرٹیکل 25,24,23,14,9,4 کے خلاف ہے ، رہائشی علاقے میں کوئلے سے بجلی پیدا کرنے کا پراجیکٹ لگا کر رہائشی علاقے کو آلودہ علاقے میں تبدیل کیا جا رہا ہے اور اس پراجیکٹ سے پودوں کو نقصان ہو گا، انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ مذکور کول پاور پراجیکٹ بین الاقوامی بارڈر کے قریب تعمیر کیا جا رہا ہے جبکہ وزارت دفاع کی پالیسی کے مطابق اس علاقے کو ممنوعہ علاقہ قرار دیا گیا ہے ،کوئلے سے بجلی پیدا کرنے والے پلانٹ کی تعمیر کو بنیادی حقوق سے متصادم قرار دے کر کالعدم کیا جائے اور اراضی ایکوائر کرنے کا نوٹیفیکیشن واپس لینے کا حکم دیا جائے، انہوں نے مزید استدعا کی کہ درخواست کے حتمی فیصلے تک کوئلے سے بجلی پیدا کرنے والے پراجیکٹ پر مزید کام کرنے سے روکنے کا حکم بھی دیا جائے، عدالت نے باٹا پور میں کوئلے سے بجلی پیدا کرنے کے پلانٹ پر حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے درخواست پر لارجر بنچ بنانے کی سفارش کر دی ، لارجر بنچ تشکیل دینے کے لئے اسی نوعیت کی تمام درخواستیں چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کو بجھوا دی گئی ہیں۔

مزید :

لاہور -