بینکوں کے لین دین پر عائد کردہ ٹیکس صریحاً زیادتی ہے،عبدالعلیم خان

بینکوں کے لین دین پر عائد کردہ ٹیکس صریحاً زیادتی ہے،عبدالعلیم خان

  

لاہور(نمائندہ خصوصی) چئیرمین تحریک انصاف کے پولیٹیکل ایڈوائزر عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ ملک بھر کا تاجر طبقہ حکومتی پالیسیوں سے سخت نالاں ہے ،بلخصوص بینکوں کے لین دین پر عائد کردہ ٹیکس صریحاً زیادتی ہے جس پر حکومت کی ذمہ داری ہے کہ فوری طور پر تاجر برادری کے تحفظات دور کرے ،انہوں نے کہا کہ 0.6سے کم کر کے 0.3فیصد کرنے کی بجائے حکومت ٹیکس نیٹ میں اضافے کی کوشش کرے ،ملکی معیشت پہلے ہی بے یقینی کا شکار ہے گذشتہ روز کراچی میں ایک دن میں سٹاک مارکیٹ میں 31ارب روپے کی کمی بہت بڑا سوالیہ نشان ہے ۔عبدالعلیم خان نے کہا کہ تاجر طبقہ قومی معاشی لحاظ سے ریڑ ھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے اور بینکنگ ٹیکس کے مسئلے پر پی ٹی آئی ٹریڈرز کمیونٹی کے ساتھ کھڑی ہے ،انہوں نے کہا کہ وزیر خزانہ تمام تر خرابیوں کی جڑ ہیں انہوں نے تاجروں کو بھی ٹرک کی بتی کے پیچھے لگا رکھا ہے اور صرف طفل تسلیوں پر کام چلایا جا رہا ہے ۔عبدالعلیم خان نے کہا کہ آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک کے اشارو ں پر بنائی جانے والی پالیسیوں کے نتائج خطر ناک ثابت ہوں گے ۔پی ٹی آئی آفس میں پارٹی رہنماؤں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے عبدالعلیم خان نے کہا کہ تحریک انصاف عیدالفطر کے فوراً بعد بلدیاتی انتخابات کی باقاعدہ مہم شرو ع کر دے گی اور پہلے مرحلے میں عمران خان کی ہدایات کے مطابق عوامی رابطوں کا آغاز کیا جائے گا ،انہوں نے کہا کہ نواز لیگ کی مصنوعی مقبولیت ریت کی دیوار ثابت ہو گی اور جلد پیپلز پارٹی کی طرح اس جماعت کا بھی دھڑن تختہ ہو جائے گا ۔عبدالعلیم خان نے کہا کہ جلد دیگر جماعتوں سے مزید رہنما پی ٹی آئی میں شامل ہوں گے اور بلدیاتی انتخابات میں ملک گیر سطح پر تحریک انصاف سب سے بڑی سیاسی جماعت ثابت ہو گی ،عبدالعلیم خا ن سے ملاقات کرنے والوں میں شعیب صدیقی ،میاں منشاء سندھو ،خواجہ جمشید امام ،میاں یامین ٹیپو ،میاں جاوید علی ،فرخ جاوید مون اور شیخ عامر شامل تھے ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -