ہاکی ٹیم کی ناقص کارکردگی بارے تحقیقاتی کمیٹی کا اجلاس 23جولائی کو دوبارہ طلب

ہاکی ٹیم کی ناقص کارکردگی بارے تحقیقاتی کمیٹی کا اجلاس 23جولائی کو دوبارہ طلب

  

 اسلام آباد (آن لائن) قومی ہاکی ٹیم کی اولمپک کوالیفائنگ راؤنڈ میں مایوس کارکردگی اور میگا ایونٹ کیلئے کوالیفائی نہ کرنے کی تحقیقات کیلئے وزیر اعظم نواز شریف کی جانب سے قائم کی گئی انکوائری کمیٹی نے اپنی رپورٹ کو حتمی شکل دینے کیلئے پاکستان ہاکی فیڈریشن کے عہدداران کو 23جولائی کو دوبارہ طلب کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ انکوائری کمیٹی کے سربراہ اعجاز چوہدری کا کہنا تھا کہ کمیٹی نے ابھی تک اپنی رپورٹ ہی مرتب نہیں کی تو وزیر اعظم نواز شریف کو رپورٹ کی سفارشات کیسے بھجوائی جا سکتی ہیں ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق عید الفطر کی تعطیلات کے بعد وفاقی سیکرٹری بین ا لصوبائی رابطہ اعجاز چوہدری کی سربراہی میں کام کرنیوالی انکوائری کمیٹی کا اجلاس پاکستان سپورٹس کمپلیکس میں ہو گا جس میں قومی ہاکی ٹیم کی اولمپک کوالیفائنگ راونڈ میں خراب کارکردگی کی وجوہات کا جائزہ لیا جائے گا ۔ اس حوالے سے انکوائری کمیٹی کے سربراہ اعجاز چوہدری کا کہنا تھا کہ کمیٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ وزیر اعظم نواز شریف کو اپنی رپورٹ بھجوانے سے قبل ایک اور اجلاس منعقد کیا جائے جس میں پاکستان ہاکی فیڈریشن کے صدر چوہدری اختر رسول اور سیکرٹری اور رانا مجاہد کو 23جولائی کو ہونیوالے اجلاس میں دوبارہ طلب کیا گیا ہے ۔میڈیا کے کچھ حصوں میں رپورٹ وزیر اعظم نواز شریف کو بھجوائے جانے کے حوالے سے وفاقی سیکرٹری اعجاز چوہدری نے واضح کیا کہ انکوائری کمیٹی نے ابھی اپنی رپورٹ مرتب ہی نہیں کی تو اسے وزیر اعظم کو بھجوانے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا جبکہ اس حوالے سے میڈیا میں آنے والی اطلاعات درست نہیں ہے جبکہ کمیٹی 23جولائی کو ہونیوالے اجلاس کے بعد اپنی رپورٹ اور سفارشات کو حتمی شکل دے گی ۔کمیٹی کے ایک رکن کا کہنا تھا کہ کمیٹی کی سفارشات کا مقصدر وزیر اعظم کو ہاکی کی بہتری کے ھوالے سے گائیڈ لائن فراہم کرنا ہے تاکہ ہاکی کو درپیش بحران سے باہر نکالا جا سکے ۔واضح رہے کہ قومی ہاکی ٹیم کے ہیڈ کوچ شہناز شیخ نے اولمپک گیمز کے کیلئے کوالیفائی نہ کرنے اور بیلجیم میں کھیلے گئے ایونٹ میں قومی ہاکی ٹیم کی خراب کارکردگی کے حوالے سے 20صفحات پر مشتمل اپنی رپورٹ انکوائری کمیٹی کو پہلے ہی جمع کروا دی ہے جس میں ہاکی ٹیم کی مایوس کن پرفارمنس کی وجوہات سے انکوائری کمیٹی کو آگاہ کیا گیا ہے جبکہ انکوائری کمیٹی کے سربراہ اعجاز چوہدری پہلے ہی واضح کر چکے ہیں کہ حکومت پاکستان ہاکی فیڈریشن کیخلاف کوئی غیر آئینی اقدام نہیں اٹھائے گی اور ہاکی کی بہتری کیلئے اپنی تجاویز وزیر اعظم نواز شریف کو بھجوائی گی۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -