بھارت نے 29ہزار کروڑ روپے کا دفاعی سازوسامان خرید نے کی منظوری دیدی

بھارت نے 29ہزار کروڑ روپے کا دفاعی سازوسامان خرید نے کی منظوری دیدی

  

 کراچی(آن لائن ،اے این این)بھارت کا جنگی جنون عروج پر پہنچ گیا ، بھارت نے29000کروڑ روپے کے دفاعی سازو سامان کی خریداری کی منظوری دے دی ،4380 کروڑ روپے کے 4اضافی سمندری نگرانی کے طیارے بوئنگ P8Iکی خریداری ،1960 کی ایل 70 اور زیڈ یو 23 طیارہ شکن گنوں کو تبدیل کرنے ، 6جنگی بحری جہازوں اور تلوار کلاس کے ہتھیاروں اور سینسر کے نظام کی اپ گریڈیشن کیلئے 2900کروڑ روپے کی منظوری دی ۔بھارتی ٹی وی کے مطابق بھارتی دفاعی خریداری کونسل (ڈی اے سی )کے ایک اجلاس میں 290 ارب روپے سے زائد مالیت کے دفاعی خریداریوں کی منظوری دے دی گئی۔ بھارتی وزیر دفاع منوہر پریکر کی زیر صدارت ایک اجلاس میں 4380 کروڑ روپے کے چار اضافی سمندری نگرانی کے طیارے بوئنگ P8I ں کی خریداری کی منظوری دی گئی۔اس کے علاوہ 16900کروڑ روپے کی مالیت سے 1960 کی ایل 70 اور زیڈ یو 23 طیارہ شکن گنوں کو تبدیل کرنے کی تجویز کی منظوری دی گئی۔ سرکاری ذرائع کے مطابق 428 بندوقیں دفاعی پروکیورمنٹ پرسیجر کی کلاز کے تحت حاصل کی جائیں گی۔دہلی میں 6جنگی بحری جہازوں اور تلوار کلاس کے ہتھیاروں اور سینسر کے نظام کی اپ گریڈیشن کیلئے 2900کروڑ روپے کی منظوری دی گئی۔گجرات میں براہموس ٹریننگ سینٹر کے لئے تین ہزار کروڑ روپے اور بھارتی بحریہ کے مگ 29Ks اور ہاک طیاروں کے جنگی نظام کے لئے 200 کروڑ کی منظوری دی گئی۔ بھارت جنگی بحری جہازوں کی مزید خریداری کے لئے روس سے بات چیت کر رہا ہے۔نیوی وائس چیف وائس ایڈمرل پی مروجیسن کے مطابق روس سے تلوار کلاس کے مزید جنگی جہاز حاصل کیے جائیں گے۔ بھارت کے پاس اس وقت 137بحری جہاز ہیں اور2027تک وہ اس میں اضافہ کر کے 198 جنگی بحری جہازوں کی فورس بنانا چاہتا ہے۔

مزید :

صفحہ اول -