نیب پنجاب نے رواں سال 6 ماہ 10 دنوں میں کرپشن کے 70 سے زائد ملزم گرفتار کر لئے

نیب پنجاب نے رواں سال 6 ماہ 10 دنوں میں کرپشن کے 70 سے زائد ملزم گرفتار کر لئے

  

لاہور( لیاقت کھرل) نیب پنجاب نے کرپشن کے مختلف الزامات کے تحت سال رواں کے 6 ماہ 10 دنوں میں 70 سے زائد کرپٹ ملزمان کو گرفتار کیا جبکہ میگا فراڈ سمیت کرپشن ، فراڈ ( دھوکہ دہی) ، اختیارات سے تجاوز کے الزام میں سیاست دانوں سمیت بیورو کریٹوں اور دیگر ملزمان کے خلاف 1198 انکوائریوں پر تحقیقات مکمل کی ہیں جس میں 60 سے زائد ریفرنس میں تفتیش مکمل کر کے باقاعدہ عدالتوں میں پیش کیے ہیں۔ سپریم کورٹ میں پیش کی جانے والی نیب پنجاب کے ڈی جی میجر ( ر) سید برہان علی کی جانب سے پیش کردہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ نیب نے سال رواں میں کرپشن کے خاتمے کے لئے کرپٹ اور بدعنوان افراد کے خلاف گھیرا تنگ کر رکھا ہے اور اس کے دائرہ کار کو مزید بڑھا دیا گیا ہے، جس میں عیدالفطر کے بعد بڑے پیمانے پر گرفتاریاں شروع کر دی جائیں گئیں۔ اس حوالے سے نیب کے ڈی جی میجر (ر) سید برہان علی نے ’’ پاکستان‘‘ کو بتایا کہ سال رواں کے پہلے ماہ 10 دنوں میں کرپٹ اور بدعنوان افراد کے خلاف 2200 سے زائد شکایات موصول ہوئی ہیں جن میں سے 1998 شکایات پر تحقیقات کو مکمل کیا گیا ہے جس میں میگا فراڈ کے کیسز بھی شامل ہیں۔ اس میں کرپشن اور بدعنوانی میں ملوث 70 سے زائد ملزمان کو گرفتار کیا گیا ہے اور اس کے ساتھ ساتھ 60 سے زائد کیسوں میں تفتیش مکمل کر کے باقاعدہ ریفرنس کی شکل دے کر عدالتوں میں پیش کیے گئے ہیں۔ اس کے علاوہ 110 انکوائریوں میں تحقیقات مکمل کر لی گئی ہے، جبکہ اس کے ساتھ 70 سے زائد مزید کیسوں میں تفتیش کو مکمل کیا جا رہا ہے جس میں عید کے بعد بڑے پیمانے پر کرپٹ عناصر کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کر دیا جائے گا جس میں مقامی پولیس کی بھی مدد حاصل کی جائے گی۔

مزید :

صفحہ آخر -