حکومت ریٹائرڈملازمین کو بے سہارانہ چھوڑے، پنشنرز ایسوسی ایشن

حکومت ریٹائرڈملازمین کو بے سہارانہ چھوڑے، پنشنرز ایسوسی ایشن

  

الپوری(ڈسٹرکٹ رپورٹر)شانگلہ پنشنرز ایسوسی ایشن کا اجلاس، پینشنرز کو درپیش مسائیل پر غور کیا جائے، حکومت ریٹائرڈ ملازمین کو بے سہارا نہ چھوڑیں۔ریاست کیلئے اپنے جوانی صرف کرنے اور حکومت کیلئے تمام زندگی خدمات کرنے والوں کے ساتھ امتیازی سلوک، پنشن میں اضافہ نہ کرنا اور ان کے دیگر مسائیل کے حل نہ کرنا زیادتی ہے۔ پنشنرز ایسوسی ایشن ضلع شانگلہ کا اجلاس گزشتہ روز گورنمنٹ پرائمری سکول ہیڈ کوارٹر الپوری کے اڈیٹیوریم ہال میں منعقد ہوا جس میں محمد یونس، عبد الکبیر،طوراباز خان، زمان خان، ابن امین، محمد ایوب، سید البشر، صاحبزادہ، تاجپور سمیت شانگلہ کے مختلف علاقوں سے تعلق رکھنے والے پنشنرز نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ پنشنرز نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ،گروپ انشورنس، بی فنڈ اور میڈیکل فنڈ کے مسائیل کو حل کیا جائے، مہنگائی کے اس طوفانی دور میں پنشن میں اضافہ نہ کرنا ظلم کے مترادف ہے، حکومت ان بے سہارا بزرگوں کو تنہا نہ چھوڑے، اس وقت یہ ریٹائرڈ ملازمین شدید مالی بحران کا شکار ہیں جس میں آکثر انتہائی بیمار اور ضعیف بھی موجود ہیں، بعض ریٹائرڈ ملازمین کی پنشن انتہائی کم ہے جو ان کی صحت کی ضروریات تک پورا نہیں کرسکتی اور انھوں نے اپنی زندگی کے چالیس سال اس ریاست کی ترقی اور خدمت میں گزاری، پنشنرز نے حکومت سے ریٹائرڈ ہونے والے ملازمین کے مشکلات کو مد نظر رکھتے ہوئے عملی اقدمات کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہاکہ ان کیلئے از سر نو ایک ایسا منصوبہ تیار کیا جائے جس سے ان کو درپیش مسائیل اور محرومیوں کا ازالہ ہوسکے۔۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -