ڈبلیو ایس ایس پی نے کچرا چننے والے افراد کی تربیت شروع کر دی

  ڈبلیو ایس ایس پی نے کچرا چننے والے افراد کی تربیت شروع کر دی

  

پشاور (سٹی رپورٹر) واٹر اینڈ سینی ٹیشن سروسز پشاور (ڈبلیو ایس ایس پی) نے کچرا چننے والے افراد کی تربیت شروع کر دی ڈمپنگ سائٹ، کنٹینرز اور ٹرانسفر سٹیشنوں میں کوڑا کرکٹ میں کارآمد اشیاء ڈھونڈنے والے افراد کو ذاتی صحت وتحفظ، احتیاطی تدابیر، روڈ سیفٹی و استعمال، امراض سے بچاؤ، طبی فضلہ سے دور رہنے سمیت دیگر حوالوں سے تربیت دی جارہی ہے،آپریشن اور انفارمیشن اینڈ کمیونیکیشن ڈیپارٹمنٹ کے اہلکار ان افراد کے ساتھ تربیتی سیشن منعقد کر رہے ہیں زون ڈی کی ڈمپنگ سائٹ میں پہلا سیشن مکمل کرلیا گیا ہے۔ ضلع پشاور میں کچرا چننے سے بلواسطہ اور بلا واسطہ ایک اندازے کے مطابق پانچ ہزار افراد کا روزگار وابستہ ہے اور سالیڈ ویسٹ مینجمنٹ میں ان کا کردار 20 فیصد کے لگ بھگ ہے یہ افراد کوڑا کرکٹ میں ہڈی، شیشہ، پلاسٹک، کاغذ، بوتل اور دیگر کارآمد ودوبارہ قابل استعمال اشیاء ڈھونڈ رہے ہیں جنہیں صنعتوں کو فراہم کر کے اپنے خاندانوں کی کفالت کر رہے ہیں۔ تربیتی سیشن میں صحت وذاتی تحفظ، مشینری سے دور رہنے، روڈ سیفٹی، امراض تنفس سے بچاؤ کے لئے ماسک کے استعمال، سڑکوں کے قریب کنٹینرز کے ساتھ گزرنے والی گاڑیوں سے دور رہنے سمیت دیگر پہلوؤں بارے آگاہی دی جارہی ہے۔ ڈبلیو ایس ایس پی کچرا چننے والے افراد کو تربیت دیکر ان کے کردار کو منظم بنارہی ہے تاکہ نہ صرف ان کی صحت اور ذاتی تحفظ کو یقینی بنایا جاسکے بلکہ کچرا چننے کو رسمی شکل دیکر ماحول کو صاف ستھرا رکھا جاسکے اور ساتھ ساتھ گندگی دوبارہ نہ پھیلے۔افتتاحی تربیتی سیشن کے دوران کچرا چننے والے افراد میں صابن اور ماسک بھی تقسیم کئے گئے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -