ملک بھر میں پولیو ایمرجنسی نافذ کرنے کی قرارداد اسمبلی میں جمع

  ملک بھر میں پولیو ایمرجنسی نافذ کرنے کی قرارداد اسمبلی میں جمع

  

لاہور(نمائندہ خصوصی،لیڈی رپورٹر) لاہور میں پولیو سے بچے کی ہلاکت، ملک بھر میں پولیو ایمرجنسی نافذ کرنے کے مطالبے کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع،قرارداد مسلم لیگ (ن) کی رکن اسوہ آفتاب کی جانب سے جمع کرائی گئی جس میں کہا گیا کہ پنجاب اسمبلی کا یہ ایوان لاہور میں کمسن بچے کی پولیو سے ہلاکت پر گہرے افسوس کا اظہار کرتا ہے۔لاہور میں پولیو سے ہلاکت کا یہ اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ ہے۔ رواں برس رپورٹ ہونے والے مجموعی کیسز کی تعداد 53 تک پہنچ گئی۔مئی کے مہینے میں پولیو کے دو نئے کیسز رپورٹ ہوئے تھے جبکہ ا س سے قبل مارچ میں تین بچوں میں بھی وائرس کی تصدیق ہوئی تھی۔

رواں سال میں اب تک صوبہ سندھ میں 21، خیبرپختونخواہ میں 18، بلوچستان میں 11 اور پنجاب میں 3 کیسز رپورٹ ہوئے۔

پولیو کے حوالے سے سال 2019 بدترین رہا جب ملک بھر میں 146 نئے کیسز سامنے آئے تھے، یہ شرح سنہ 2014 کے بعد بلند ترین تھی۔اسی طرح سنہ 2015 میں ملک میں 54، 2016 میں 20، 2017 میں سب سے کم صرف 8 اور سنہ 2018 میں 12 پولیو کیسز ریکارڈ کیے گئے تھے۔ اس تمام عرصے میں پولیو کیسز کی سب سے زیادہ شرح صوبہ خیبر پختونخواہ میں دیکھی گئی۔موجودہ حکومت پولیو وائرس کے پھیلا? کو سنجیدہ نہیں لے رہی۔پولیو جیسی جان لیوا بیماری کا پاکستان میں دوبارہ سر اٹھانا سنگین خطرے کی علامت ہے۔یہ ایوان مطالبہ کرتا ہے کہ ملک بھر میں فوری پولیو ایمرجنسی نافذ کی جائے۔بلاتعطل ملک بھر میں پولیو مہم چلائی جائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -