ایران کا بھارت کو چاہ بہار بندر گاہ سے الگ کرنا اہم پیشرفت ہے،جاوید قصوری

    ایران کا بھارت کو چاہ بہار بندر گاہ سے الگ کرنا اہم پیشرفت ہے،جاوید قصوری

  

لاہور (سٹی رپورٹر)امیرجماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب و صدر ملی یکجہتی کونسل پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہاہے کہ ایران کی جانب سے چاہ بہار بندر گاہ سے بھارت کوالگ کرنا اہم پیش رفت ہے۔ اس سے خطے میں امن و استحکام کو تقویت ملے گی۔ان شا ء اللہ، ہندوستان کے تمام مذموم عزائم خا ک میں مل جائیں گے۔ افغانستان اورپاکستان میں بھارتی مداخلت کا بھی خاتمہ ہو جائے گا۔

ایران نے چین کے ساتھ مل کر 400ارب ڈالر کا تاریخی تجارتی و دفاعی معاہد ہ کیا ہے۔اس سے ایران کی معیشت بھی بہتر ہو گئی اور پاکستان کے حوالے سے بھی یہ فائدہ مند ہو گا۔گوادر اور سی پیک کامیابی سے جلد پایہ تکمیل تاک پہنچے گا اورہندوستان کی خطے میں چوہدراہٹ کا خاتمہ ہو گا۔ امن کی خواہش کو پائیدار بنانے کے لیے جنوبی ایشیا میں بھارت کے کردار کو محدود کرنا ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز مختلف تقریبات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کا گھناونا کر دار دنیا کے سامنے آشکار ہوچکا ہے۔ بھارت ایک انتہا پسند ریاست اور وزیر اعظم مودی آر ایس ایس کے ایجنڈے کی تکمیل کررہے ہیں۔ اکھنڈ بھارت کا خواب کبھی شرمندہ تعبیر نہیں ہوسکتا۔ پاکستان اور اس کے 22کروڑ عوام نے ہمیشہ امن کا ساتھ دیا ہے۔ اب وقت آگیا ہے کہ بھارت کی مکر بازیوں کو بے نقاب کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان پوری طاقت کے ساتھ بیرونی دنیا کے سامنے ہندوستان کا اصل چہرہ سامنے لائے۔ ہندوستان میں آباد اقلیتوں سمیت مقبوضہ کشمیر کے عوام پر جو ظلم و ستم اور بربریت کا مظاہرہ بھارتی افواج کی جانب سے کیا جارہا ہے اس کی مثال کہیں نہیں ملتی۔ ایک لاکھ سے زائدہ کشمیری شہید اور ہزاروں خواتین کی بے حرمتی کی گئی ہے۔محمد جاوید قصوری نے اس حوالے سے مزید کہا کہ بلوچستان اور پاکستان کے دیگر حصوں میں دہشت گردی کے واقعات میں براہ راست بھارت ملوث ہے۔ پنجگور میں دہشت گردوں کی فائرنگ پاک فوج کے تین جوانوں کی شہادت قابل مذمت ہے۔ بھارت لداخ میں چینی فوجیوں کے ہاتھوں شرمناک شکست اور چاہ بہار کی سبکی سے توجہ ہٹانے کے لیے اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آیا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -