سول عدالت،نوازشریف کی والدہ کیخلاف اراضی پر قبضہ کاکیس،وکلاء طلب

سول عدالت،نوازشریف کی والدہ کیخلاف اراضی پر قبضہ کاکیس،وکلاء طلب

  

لاہور(نامہ نگار)سول عدالت نے سابق وزیراعظم میاں نوازشریف کی والدہ شمیم اخترکے خلاف اراضی پر قبضہ کے خلاف دائردرخواست پروکلا کو بحث کے لئے آئندہ سماعت پر طلب کرلیا ہے،فاضل جج کے رخصت پر ہونے کے باعث کیس سماعت اگست کے دوسرے ہفتے تک ملتوی کردی گئی، درخواست گزار کا موقف ہے کہ میاں نواز شریف کی والدہ شمیم اختر نے جاتی امراء کے اطراف 108کنال اراضی پر قبضہ کر رکھا ہے،قانون کے مطابق زمین اس کے نام منتقل کرنے کا حکم دیا جائے جبکہ میاں نواز شریف کی والدہ شمیم بیگم کا موقف ہے کہ درخواست گزار کے ورثا سے 51 لاکھ 84 ہزار روپے کے عوض زمین خریدی، اراضی پر قبضہ کرنے دعوا جھوٹ پر مبنی ہے، دعویدار خاتون رابعہ روشن نے ایک لمبے عرصے تک رجسٹری کو چیلنج نہیں کیا، دعویٰ مجھے اور میری فیملی کو بلیک میل کرنے کے لئے دائر کیا گیاہے،عدالت سے استدعاہے کہ ارضی پر قبضے کا دعویٰ پر مسترد کرتے ہوئے درخواست گزار پر جرمانہ عائد کرے۔

مزید :

علاقائی -