جزاوسزاکے عمل کوپولیس سروس میں کلیدی حیثیت حاصل ہے: شعیب دستگیر

جزاوسزاکے عمل کوپولیس سروس میں کلیدی حیثیت حاصل ہے: شعیب دستگیر

  

لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب شعیب دستگیر نے کہا ہے کہ پولیس ملازمین سے متعلق عوامی شکایات کا بلاتاخیر ازالہ نہایت ضروری ہے لہذا صوبے کے کسی بھی ضلع یا یونٹ میں اگر پولیس افسر یا اہلکار کے خلاف 8787آئی جی پی کمپلینٹ سنٹر پر کوئی شکایت آئے توجدید انٹی گریٹڈ سسٹم کے تحت ایڈیشنل آئی جی آئی اے بی کے ڈیش بورڈ پر فوری الرٹ جاری ہوناچائیے تاکہ ٹائم فریم کے مطابق اقدامات کو یقینی بناتے ہوئے کاروائی کو فوری مکمل کروایا جاسکے۔ انہوں نے مزیدکہا کہ ایڈیشنل آئی جی آئی اے بی پولیس ملازمین سے متعلق عوامی شکایات کی خود مانیٹرنگ کریں اور ایکشن میں تاخیر کا سبب بننے والی سپر وائزی افسران سے بھی بازپرس کی جائے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ پیشہ ورانہ فرائض میں غفلت یا کوتاہی کے مرتکب ماتحت افسران و اہلکاروں کو سزا نکی اصلاح کے پیش نظر دی جاتی ہے لہذا تمام افسران ماتحت سٹاف کو سزائیں دیتے وقت آئی جی آفس کے جاری کردہ ڈسپلن میٹرکس کی پاسداری کو ہرصورت یقینی بنائیں۔ انہوں نے ہیومن ریسورس مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم میں ڈسپلن میٹرکس کے حوالے سے نئے فیچر کے اضافے کا حکم جاری کرتے ہوئے کہاکہ ماتحتوں کو کوتاہی یا غفلت پر ڈسپلن میٹرکس سے ہٹ کر سزا دینے والوں کے خلاف ایڈیشنل آئی جی اسٹیبشلمنٹ کے ڈیش بورڈ پر الرٹ جاری ہونا چاہئیے تاکہ ذمہ داران سے فوری جواب طلبی کی جاسکے۔ یہ احکامات انہوں نے سنٹرل پولیس آفس میں منعقدہ اجلاس کی صدارت افسران کو ہدایات دیتے ہوئے جاری کئے۔آئی جی پنجاب نے افسران سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ جزا و سزا کے عمل کو پولیس سروس میں کلیدی حیثیت حاصل ہے دوران ڈیوٹی اچھی پرفارمنس کے مظاہرے پر محکمہ میں جہاں ہر ممکن حوصلہ افزائی کی جاتی ہے وہیں کوتاہیوں اور غفلت پر سزا بھی پولیس سروس کا حصہ ہے لیکن ماتحت افسران وا ہلکاروں کو سزائیں دیتے وقت آئی جی آفس کے جاری کردہ ڈسپلن میٹرکس کی پابندی انتہائی ضروری ہے اور جنہوں نے ذاتی رنجش، تعلق یا پسند کی بناء اس حوالے سے ایس او پیز سے رو گردانی کی انہیں جواب دینا ہونا پڑے گا۔

آئی جی پنجاب نے ایڈیشنل آئی جی انٹرنل اکاؤنٹیبلیٹی بیورو اظہر حمید کھوکھر اور ایڈیشنل آئی جی اسٹیبلشمنٹ بی اے ناصر کو اس حوالے سے تمام امور کی خود مانیٹرنگ کرنے کی ہدایات جاری کیں۔

مزید :

علاقائی -