مذہب سے متعلق بیان، خواجہ آصف کی نااہلی کیلئے ریفرنس سپیکر قومی اسمبلی کوارسال

  مذہب سے متعلق بیان، خواجہ آصف کی نااہلی کیلئے ریفرنس سپیکر قومی اسمبلی ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) مذہب سے متعلق بیان پر مسلم لیگ (ن) کے پارلیمانی لیڈر خواجہ آصف کی نااہلی کیلئے ریفرنس سپیکر قومی اسمبلی کو ترجمان شہداء فاؤنڈیشن پاکستان کی جانب سے ارسال کر دیا گیا،ریفرنس میں کہا گیا ہے کہ تمام مذاہب کو برابر قرار دیکر مسلم لیگ نواز کے رہنماء خواجہ آصف آئین پاکستان کے آرٹیکل 62ون ای کے تحت رکن قومی اسمبلی رہنے کے اہل نہیں رہے۔ شہداء فاؤنڈیشن آف پاکستا ن کے ترجمان حافظ احتشام احمد نے ریفرنس آئین پاکستان کے آرٹیکل 63دوکے تحت ارسال کیا ہے،ریفرنس میں موقف اختیار کیا گیا ہے 8جولائی کو قومی اسمبلی میں خطاب کے دوران خواجہ آصف کا مذہب کے متعلق توہین آمیز بیان اس بات کا ثبوت ہے کہ انہیں اسلام کی بنیادی تعلیمات کا ہی علم نہیں،لہٰذا وہ آرٹیکل 62ون ای کے تحت رکن قومی اسمبلی رہنے کے اہل نہیں۔ریفرنس میں سپیکر قومی اسمبلی سے استد عا کی گئی ہے کہ خواجہ آصف کو نااہل قرار دیکر بحیثیت رکن قومی اسمبلی سے ڈی سیٹ کرنے کیلئے ریفرنس آئین پاکستان کے آرٹیکل 63دو کے تحت آئندہ تیس دن کے اندر الیکشن کمیشن پاکستان کو ارسال کیا جائے۔ ریفرنس میں مزید کہا گیا ہے کہ خواجہ آصف نے 8جولائی کو قومی اسمبلی میں خطاب کے دوران ایسے الفاظ کہے جو توہین اسلام و قران تعلیمات کی نفی ہے،8جولائی کو قومی اسمبلی میں خطاب کے دوران خواجہ آصف نے یہ بھی کہا تھا کہ انہوں نے عید کی نماز نیویارک میں چرچ میں اداء کی تھی،خواجہ آصف کو یہ بھی معلوم نہیں کہ مسلمانوں کو عید کی نماز عید گاہ یا مسجد میں پڑھنے کا حکم ہے،مساجد کی موجودگی میں چرچ یا گرجا گھروں میں نماز پڑھنا ناجائز و حرام ہے،آئین پاکستان کے آرٹیکل 62ون ای کے تحت رکن قومی اسمبلی بننے یا رکن قومی اسمبلی رہنے کیلئے ضروری ہے کہ اسلام کی تعلیمات کا خاطر خواہ علم ہو۔ریفرنس میں مزید کہا گیا ہے کہ ”آئین پاکستان کے آرٹیکل 62کے تحت جب کسی رکن قومی اسمبلی کی اہلیت پر کوئی سوال اٹھے تو آئین پاکستان کے آرٹیکل 63دوکے تحت سپیکر قومی اسمبلی پر لازم ہے کہ وہ مذکورہ رکن قومی اسمبلی کو نااہل قرار دیکر ڈی سیٹ کرنے کیلئے ریفرنس تیس دنوں کے اندر الیکشن کمیشن پاکستان کو ارسال کریں۔

خواجہ آصف ریفرنس

مزید :

صفحہ اول -