لاہور ہائیکورٹ، نجی سکولوں کو فیسوں میں 5فیصد سالانہ اضافہ کی اجازت دینے کو نوٹیفکیشن معطل

لاہور ہائیکورٹ، نجی سکولوں کو فیسوں میں 5فیصد سالانہ اضافہ کی اجازت دینے کو ...

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ نے نجی سکولوں کو فیسوں میں زیادہ سے زیادہ 5فیصد سالانہ اضافہ کی اجازت دینے کا نوٹیفکیشن معطل کردیا،عدالت نے یہ عبوری حکم پرائیویٹ سکولوں کی درخواست پر جاری کیا،فاضل جج نے کیس کی سماعت ستمبر تک ملتوی کرتے ہوئے فریقین سے جواب بھی طلب کرلیاہے۔طلباء کے وکیل صفدر شاہین پیرزادہ نے فیسوں میں اضافے کا نوٹیفکیشن معطل کرنے پر اعتراض اٹھاتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ پرائیویٹ سکولوں کی درخواست میں طلباء کا موقف لینا ضروری ہے، سپریم کورٹ کے فیصلے کے تحت سکول فیس میں پانچ فیصد اضافہ کرسکتے، نوٹیفکیشن معطل کئے جانے سے پرائیویٹ سکول فیسوں میں من مانے اضافے کریں گے،ندا اسلم اورالطاف احمد سمیت متعدد طلباء نے فیسوں میں من مانے اضافہ کو عدالت عالیہ میں چیلنج کررکھاہے،گزشتہ تاریخ سماعت پر متعلقہ حکام کی طرف سے عدالت میں ایک نوٹیفکیشن پیش کیا گیا تھا جس کے مطابق کوئی سکول 5فیصد سے زیادہ فیس نہیں بڑھا سکتا،اب پرائیویٹ سکولوں نے ایک متفرق درخواست کے ذریعے اس نوٹیفکیشن کو چیلنج کیاہے،عدالت نے نوٹیفکیشن معطل کرتے ہوئے مزید سماعت ستمبر تک ملتوی کردی۔

نوٹیفکیشن معطل

مزید :

صفحہ آخر -