18ویں ترمیم ختم کرکے مضبوط مرکز بنایا جائے: ڈاکٹر سلیم حیدر

  18ویں ترمیم ختم کرکے مضبوط مرکز بنایا جائے: ڈاکٹر سلیم حیدر

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہا ہے کہ 18ویں ترمیم کو ختم کرکے مضبوط مرکز کی بنیاد رکھی جائے۔ 18ویں ترمیم کے ذریعے صوبوں کو جو اختیارات حاصل ہوئے ہیں وہ نہ تو عوام کی فلاح وبہبود کیلئے استعمال ہورہے ہیں اور نہ ہی ان کے بجٹ کو منصفانہ طورپر خرچ کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ سندھ میں پہلے ہی پیپلزپارٹی کی صوبائی حکومت کرپشن، لوٹ کے ریکارڈ قائم کرچکی تھی اوپر سے 18ویں ترمیم کے ذریعے اس حکومت کو مزید اختیارات دیئے جانے کے بعد اب ادارے تباہی سے دوچار ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ صوبائی حکومت مرکز سے سندھ کے نام پر بجٹ اور فنڈز حاصل کرتی ہے لیکن سندھ میں سندھیوں کے نام پر تقسیم کئے جاتے ہیں۔ کراچی اور حیدرآباد جوکہ 75فیصد ریونیو دیتا ہے اس کے شہری بدحالی اور ابتری کا شکار ہیں۔ کراچی اور حیدرآباد میں صوبائی حکومت نے نہ تو تعلیمی ادارے بنائے اور نہ ہی صحت کے مراکز، حالت یہ ہے کہ کورونا وائر س کی وبا کے بعد اربوں روپے کے فنڈز صوبائی حکومت کی لوٹ مار کی نذر ہوگئے ہیں۔ ان دونوں شہروں کے عوام نجی تعلیم، نجی اداروں سے صحت کی سہولیات حاصل کرتے ہیں جس کیلئے انہیں بھاری اخراجات اٹھانا پڑرہے ہیں لیکن صوبائی حکومت سرکاری سطح پر یہاں کے عوام کو کسی قسم کی سہولیات فراہم کرنے کو تیا رنہیں ہیں۔ انہوں نے کہاکہ سندھ کے متعصب حکمران سارا بجٹ یا تو اپنی عیاشیوں پر خرچ کررہے ہیں یا پھر سندھ کے دیہی علاقوں کی ترقی کے نام پر ظاہر کئے جاتے ہیں۔ سب سے زیادہ ٹیکس دینے والے عوام کو اپنے جائز کاموں کیلئے بھی بھاری رشوت دینی پڑتی ہے، کراچی اور حیدرآباد میں اندرون سندھ کے بدنام زمانہ افسران کو ریکوری کیلئے یہاں لایا جاتا ہے۔

دعا منگی کیس، ملزمان پر فر

مزید :

صفحہ آخر -