ہائی کورٹ،شادی ہال تعمیرکرنیکی اجازت، توہین عدالت کی درخواست پر کمشنر ملتان کی طلبی، ایک ہفتے میں پٹیشنر کی داد رسی کا وعدہ

  ہائی کورٹ،شادی ہال تعمیرکرنیکی اجازت، توہین عدالت کی درخواست پر کمشنر ...

  

ملتان (خصو صی ر پو رٹر)ہائیکورٹ ملتان بنچ کے جج جسٹس محمد امیر بھٹی نے شادی ہال تعمیر کرنے کی اجازت دینے کے عدالتی حکم پر عملدرآمد نہ کرنے پر توہین عدالت کی درخواست پر کمشنر ملتان شان الحق کو طلب کیا جنہوں نے(بقیہ نمبر48صفحہ6پر)

عدالت کو یقین دہانی کرائی کہ وہ ایک ہفتے میں پٹیشنر کی داد رسی کریں گے جس پر درخواست نمٹادی گئی۔قبل ازیں فاضل عدالت میں پٹیشنر آفتاب قاسم نے کونسل شیخ جمشید حیات کے ذریعے درخواست دائر کرتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ وہ ملتان میں ایک شادی ہال تعمیر کرنا چاہتے ہیں جس پر تمام ضروری کاغذات مکمل اور تمام متعلقہ محکمہ جات نے بھی دے دی ہے لیکن اس سب کے باوجود ڈسٹرکٹ ڈیزائن پلاننگ کمیٹی جس کے سربراہ کمشنر ملتان ہے اس کی منظوری نہیں دے رہے جس پر عدالت عالیہ سے رجوع کیا تھا اور ہائی کورٹ نے فروری 2020 میں ایک ماہ میں معاملہ نمٹانے کی ہدایت کی مگر پانچ ماہ کا عرصہ گزرنے کے باوجود اجازت نہیں دی جا رہی جس پر توہین عدالت کی درخواست دی گئی ہے دوران سماعت فاضل جج نے استفسار کیا کہ ڈسٹرکٹ ڈیزائن پلاننگ کمیٹی کا سربراہ کون ہے تو انہیں بتایا گیا کہ کمشنر ملتان اس کمیٹی کے چیئرمین ہیں چنانچہ فاضل عدالت نے سماعت ایک گھنٹہ کے لیے روکتے ہوئے کمشنر ملتان کو طلب کر لیا جنہوں نے ایک ہفتے میں فیصلہ کرنے کی یقین دہانی کرائی تو عدالت نے درخواست نمٹا دی۔

اجازت

مزید :

ملتان صفحہ آخر -