چین کے بعد طاعون کی وبا امریکہ بھی پہنچ گئی، انتہائی تشویشناک خبرآگئی

چین کے بعد طاعون کی وبا امریکہ بھی پہنچ گئی، انتہائی تشویشناک خبرآگئی
چین کے بعد طاعون کی وبا امریکہ بھی پہنچ گئی، انتہائی تشویشناک خبرآگئی

  

بیجنگ، کولوراڈو (ڈیلی پاکستان آن لائن) کورونا وائرس  کے بعد طاعون بھی سراٹھانے لگا،  منگولیا میں  اس موذی کی وجہ سے ایک 15سالہ لڑکے کی موت بھی واقع ہو گئی ہے اور اب امریکہ میں طاعون کی تصدیق ہوگئی ہے  ، اس کے بعد وزارت صحت کے حکام نے وارننگ جاری کردی۔

سی این این کے مطابق پبلک ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے جاری اعلامیہ میں بتایا گیا ہے کہ کولراڈو  کے قصبے موریسن میں 11 جولائی کو ایک گلہری میں طاعون کی تصدیق ہوئی ہے اور یہ رواں سال طاعون کا پہلا کیس ہے ۔  حکام نے شہریوں کو احتیاط برتنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ گلہریوں سے دور رہیں اور مردہ گلہری ملنے پر فوری طور محکمہ صحت کو مطلع کریں، اگر مناسب احتیاطی تدابیر نہ اپنائی جائیں تو یہ انسان اور حیوان دونوں کو متاثر کرسکتی ہے اور  متاثرہ جانوروں یا پسو کے کاٹنے کی وجہ سے بھی بیماری پھیل سکتی ہے ۔یادرہے کہ یہ بیماری صدیوں پرانی ہے اور اندازوں کے مطابق یورپ میں اس وبا سے 50 ملین لوگ مارے جاچکے ہیں۔

یاد رہے کہ اس سے قبل 7 جولائی کو چینی حکام نے منگولیا میں طاعون کی تصدیق کرتے ہوئےبیانور شہر میں وارننگ جاری کی تھی   اور علاقے میں اب تک طاعون کے دو درجن کے لگ بھگ افراد متاثر ہونے کا خدشہ ہے  جس کی وجہ سے ملک کے کئی علاقوں میں لاک ڈاﺅن کیا جا چکا ہے، مرنے والے اس لڑکے کے متعلق بتایا جا رہا ہے کہ یہ طاعون میں مبتلا ہونے والا پہلا مریض تھا۔ اس نے کتے کے ذریعے چوہے کی طرح کے جانور’مرموت‘ کا شکار کیا تھا اور اس کا گوشت کھایا تھا۔ ممکنہ طور پر اسی جانور کے گوشت سے اسے طاعون لاحق ہوا۔  

مزید :

ڈیلی بائیٹس -