""میرے ہوتے ہوئے ڈاکٹر عامر لیاقت کا استعفیٰ منظور نہیں ہوگا۔۔۔""وفاقی وزیر علی زیدی نےبڑا دعویٰ کرتے ہوئے وجہ بھی بتادی

""میرے ہوتے ہوئے ڈاکٹر عامر لیاقت کا استعفیٰ منظور نہیں ہوگا۔۔۔""وفاقی وزیر ...

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کےرکن قومی اسمبلی اور معروف اینکر ڈاکٹر عامر لیاقت حسین اپنے متنازعہ بیانات اور"اچھوتےکاموں"کی بنیادپرمیڈیامیں"اِن"رہنےکافن جانتےہیں،کراچی میں ہونےوالی بدترین لوڈشیڈنگ پرعامرلیاقت حسین نےسوشل میڈیاپروزیراعظم سےملکرمستعفیٰ ہونےکی خواہش کااظہارکیاتوکراچی سےہی رکن قومی اسمبلی منتخب ہونے والے وفاقی وزیر  سید علی حیدر زیدی بھی میدان میں آ گئے اور ایسی بات کہہ دی کہ ڈاکٹر عامر لیاقت حسین بھی علی زیدی کے شکر گذار نظر آ رہے ہیں ۔

تفصیلات کےمطابق کراچی سےرکن قومی اسمبلی ڈاکٹرعامرلیاقت حسین نےمائیکروبلاگنگ ویب سائٹ پرٹویٹ کرتےہوئے اپنی بے بسی کا اظہار کیا اور  کہا کہ""میں اعتراف کرتاہوں میں کراچی کا ایک بے بس ایم این اے ہوں،اپنےشہر کےلوگوں کو بجلی فراہم کروانے سے قاصر ہوں،مجھ سے کراچی اور بالخصوص اپنےحلقےکےلوگوں کاتڑپناسسکنااورمونس علوی کے جھوٹ سہنا نہیں دیکھا جاتا ،وَزیراعظم سے وقت مانگا ہے، مل کر انہیں استعفی پیش کردوں گا۔""ڈاکٹر عامر لیاقت کے ٹویٹ پر وفاقی وزیر علی حیدر زیدی میدان میں کود پڑے اور ڈاکٹر عامر کو جوابی ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ ""عامر بھائی! میں ایک چھوٹا سا آدمی ہوں، لیکن یہ گارنٹی دے سکتا ہوں کہ میرے ہوتے ہوئے آپکا استعفی منظور نہیں ہوگا،انشاء اللّہ مل کر کراچی کی روشنیاں لوٹائیں گے, اس دوران بلاول سے وصیت کی تصدیق شدہ کاپی تو مانگ لیں.  ""

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -