ڈربی پہنچنے والے قومی سکواڈ کے فاسٹ باﺅلرز کو ایسا سازگار ماحول مل گیا کہ ان کے حوصلے جوان ہو گئے، جان کر ہر پاکستانی خوش ہو جائے

ڈربی پہنچنے والے قومی سکواڈ کے فاسٹ باﺅلرز کو ایسا سازگار ماحول مل گیا کہ ان ...
ڈربی پہنچنے والے قومی سکواڈ کے فاسٹ باﺅلرز کو ایسا سازگار ماحول مل گیا کہ ان کے حوصلے جوان ہو گئے، جان کر ہر پاکستانی خوش ہو جائے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سازگار کنڈیشنز میں پاکستانی فاسٹ باﺅلرز کی کارکردگی چمک اٹھی، ڈربی میں ٹریننگ کے پہلے روز گرین ٹاپ وکٹوں اور ہوا میں خنکی نے باﺅلرز کا حوصلہ مزید جوان کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) پلے آف میچز ملتوی ہونے کے بعد کرکٹ میدانوں سے دور کھلاڑیوں نے انگلینڈ پہنچ کر ووسٹر میں 14 روزہ قرنطینہ مکمل کیا، ساتھ ہی طویل عرصے بعد نیٹ سیشنز کئے، پھر 2 انٹر اسکواڈ پریکٹس میچز کھیل کر مسابقتی کرکٹ کی کمی پوری کرنا چاہی،اگلی منزل ڈربی آمد کے بعد یہاں بدھ کو پہلی بار کرکٹرز میدان میں اترے اور بھرپور مشقوں کا سلسلہ شروع کیا، صبح اور سہ پہر کے دو لگ سیشنز میں صلاحیتیں نکھاری گئیں۔

ووسٹر کے برعکس ڈربی میں نہ صرف میدان میں سبزہ زیادہ تھا بلکہ وکٹوں پر بھی خاصی گھاس دکھائی دی، آسمان پر بادلوں، ہوا میں خنکی اور گرین ٹاپ وکٹوں نے فاسٹ باﺅلرز کا حوصلہ جوان کیا اور انہوں نے نیٹ پر بڑے پرجوش انداز میں باﺅلنگ کی، ٹیسٹ سیریز کھیلنے کے مضبوط امیدوار زیادہ سرگرم نظر آئے، محمد عباس نے سوئنگ اور کنٹرول پر توجہ دی، شاہین شاہ آفریدی اور نسیم شاہ نے بھرپور سپیڈ کے ساتھ گیندیں کرائیں۔

باﺅلنگ کوچ وقار یونس انہیں لائن و لینتھ بہتر بنانے کے مشورے دیتے نظر آئے، فہیم اشرف اور عمران خان سینئر بھی ایکشن میں دکھائی دئیے، دوسری جانب وہاب ریاض نے لمبے سپیل کرائے،تجربہ کار باﺅلر نے ٹیسٹ کرکٹ سے غیر معینہ مدت کیلئے رخصت لی تھی، ہیڈ کوچ و چیف سلیکٹر مصباح الحق نے دورہ انگلینڈ کیلئے سکواڈ کا اعلان کرنے سے قبل انہیں اعتماد میں لیا تھا کہ اگر ضرورت پڑی تو وہ ٹیسٹ میچز کیلئے دستیاب ہوں گے۔

گزشتہ روز باﺅلنگ کوچ وقاریونس کی جانب سے سینئر فاسٹ باﺅلر پر خصوصی توجہ دینے سے ظاہر ہوتا ہے کہ ٹیم مینجمنٹ ٹیسٹ سیریز میں ان کے تجربے سے فائدہ اٹھا سکتی ہے، سپنرز یاسر شاہ، عماد وسیم، کاشف بھٹی اور شاداب خان نے گھومتی گیندوں سے بیٹسمینوں کو پریشان کرنا چاہا، بیٹسمینوں نے بھی نیٹ میں اچھا وقت گزارتے ہوئے خود کو انگلش کنڈیشنز میں بہتر کارکردگی کیلئے تیار کیا۔

مزید :

کھیل -