سی این جی سٹیشنوں کو گیس کی سپلائی بحال ہونے سے گھریلو صارفین متاثر

سی این جی سٹیشنوں کو گیس کی سپلائی بحال ہونے سے گھریلو صارفین متاثر

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور( خبرنگار) صوبائی دارالحکومت سمیت پنجاب بھر میں آٹھ سال بعد سی این جی اسٹیشنوں پر پہلی بار لگاتار 20 دن کے لئے گیس کی سپلائی بحال کر دی گئی ہے جبکہ حکومت کے اس اقدام سے گیس کی کھپت بڑھ جانے سے سے گھریلو صارفین مشکلات سے دوچار ہو گئے۔تفصیلات کے مطابق لاہور سمیت پنجاب بھر میں سات سو سے زائد سی ین جی اسٹیشن کھل گئے ہیں۔ سی این جی ایسوسی ایشن کے مرکزی رہنما کیپٹن (ر) شجاع انور کے مطابق قطر سے درآمدہ ایل این جی کے باعث پنجاب بھر میں گیس کی ایڈوانس ادائیگی کرنے والے چھ سو سی این جی سٹیشن کھل گئے ہیں اور آئندہ چند روز میں ان کی تعداد ایک ہزار سے تجاوز کر جانے سے آلودگی، آئل امپورٹ بل، ٹرانسپورٹ کے کرائے کم جبکہ سی این جی سٹیشنز پر لائنیں ختم ہو جائینگی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ایل این جی کی قیمت میں آئندہ دس برس تک اضافہ کا امکان نہیں۔دوسری جانب سی این جی سیکٹر کو گیس کی بحالی کے ساتھ ہی لاہور کے اکثر علاقوں میں گیس کا پریشر ڈاؤن رہا ہے جس میں کینٹ کے علاقوں خان کالونی، آر اے بازار، غازی آباد سمیت باغبانپورہ اور اسلام پورہ کے علاقوں میں گیس کا پریشر کم رہا ہے اور شہریوں کو کھانے تیار کرنے کے اوقات میں گیس کے پریشر میں کمی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ جس پر صارفین نے شدید احتجاج کیا ہے اور گیس حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ سی این جی سیکٹر کیلئے ملنے والی گیس کو دیگر سیکٹروں کیلئے استعمال نہ کیا جائے اور گیس کی تقسیم کے فارمولے کو صحیح طریقہ سے استعمال کیا جائے تاکہ گھریلو سیکٹر میں گیس کی قلت پیدا نہ ہو۔ دوسری جانب گیس حکام کا کہنا ہے کہ گیس کی قلت کی شکایت نہ ہے۔

مزید :

علاقائی -