ڈینگی کے خاتمے کیلئے احتیاطی تدابیر کے سوا کوئی چارہ کار نہیں،پروفیسر انجم حبیب

ڈینگی کے خاتمے کیلئے احتیاطی تدابیر کے سوا کوئی چارہ کار نہیں،پروفیسر انجم ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ٓلاہور(جنرل رپورٹر)ڈینگی کے خاتمے کے لیے احتیاطی تدابیر کے علاوہ کوئی چارہ کار نہیں ،جس طرح شہری سیر و تفریح کے لیے وقت نکالتے ہیں اسی طرح انہیں چاہیے کہ وہ اپنے اردگرد کے ماحول کو صاف رکھنے کے لیے وقت نکالیں اس سے نہ صرف ڈینگی بلکہ تمام بیماریوں کو مات دی جاسکتی ہے ڈینگی مچھرکی افزائش کو روکنے کے لئے سب سے اہم کردار خواتین ادا کر سکتی ہیں لہذاہمیں معاشرے میں ڈینگی جیسی بیماریوں سے بچاؤ کے لئے اپنا کردار ادا کرنے کے ساتھ دوسروں کو انسانیت کی خاطر کام کرنے کی ترغیب دینا بھی قومی فریضہ ہے ۔ حکومت پنجاب نے گذشتہ 4سالوں کے دوران وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف کی قیادت میں ڈینگی کے خلاف جن اقدامات کو یقینی بنایا ہے وہ لائق تحسین ہیں تاہم ایسی بیماریوں سے بچاؤ کے لئے کوئی بھی حکومت اکیلے کچھ نہیں کر سکتی۔ لہذا معاشرے کے تمام طبقات آگے بڑھیں اور ڈینگی سمیت دیگر بیماریوں کے حوالے سے جنگی بنیادوں پر کام کریں۔ان خیالات کا اظہارپرنسپل پی جی ایم آئی پروفیسر انجم حبیب وہرہ، پرنسپل پوسٹ گریجویٹ کالج آف نرسنگ کوثر پروین ، اور پرنسپل نرسنگ سکول جنرل ہسپتال رئیسہ اشتیاق نے مشترکہ طور پر ڈینگی کے عالمی دن کے حوالے سے منعقد کی گئی آگاہی واک کے شرکاء سے خطاب میں کیا۔ورلڈ ڈینگی ڈے کے حوالے سے منعقدہ آگاہی واک پی جی ایم آئی سے شروع ہو کر جیل روڈ پر اختتا م پذیر ہوئی ۔واک کے شرکاء نے ڈینگی سے بچاؤ کے لئیکی جانے والی احتیاطی تدابیر، اس کے علاج معالجہ کی بابت لٹریچر پر مبنی بینرز اور پلے کارڈز بھی اٹھا رکھے تھے ۔ جبکہ واک کے اختتام پر ڈاکٹروں ، نرسوں اورنرسنگ طالبات نے جیل روڈ پر ڈینگی سے بچاؤ کے متعلق پمفلٹ بھی تقسیم کئے۔