تنخواہوں اور پنشن میں 10فیصد اضافہ ‘ انصاف بلا سود قرضوں کا اعلان

تنخواہوں اور پنشن میں 10فیصد اضافہ ‘ انصاف بلا سود قرضوں کا اعلان

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 پشاور(سید اظہر علی شاہ ) خیبر پختونخوا اسمبلی میں حزب اختلاف کی شدید ہنگامہ آرائی اور اسمبلی کے باہر سرکاری ملازمین ومعذور افراد کے احتجاجی مظاہروں کی گونج میں خیبر پختونوا کا بجٹ برائے مالی سال 2015-16 پیش کردیا گیا بجٹ کا کل حجم 487 ارب 88 کروڑ 40 لاکھ روپے ہے جبکہ مالی سال 2015-16 میں کل محاصل کا تخمینہ بھی 487 ارب 88 کروڑ 40 لاکھ روپے لگایا گیا ہے بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا گیا تاہم پرانے ٹیکسوں کی شرح میں ردوبدل کیا گیا ہے جبکہ سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشنوں میں 10 فیصد اور میڈیکل الاؤنس میں 25 فیصد اضافے کا اعلان کیا گیا بجٹ میں پشاور کیلئے 29 ارب روپے کے خصوصی پیکج صوابی سوات موٹر وئے منصوبے مالاکنڈ ڈویژن کیلئے 11 ارب روپے GDCD پروگرام اور حیات آباد فلائی اوور کیلئے ایک ارب 75 کروڑ روپے کے منصوبے کا اعلان کیا گیا بجٹ میں تعلیم کیلئے 197 ارب 54 کروڑ 22 لاکھ 13 ہزار روپے مختص کئے گئے ہیں اس سے قبل جب بجٹ اجلاس شروع ہوا تو صوبائی وزیر خزانہ مظفر سید کی تقریر کے آغاز کے ساتھ ہی پیپلز پارٹی ، جے یو آئی اور اے این پی پر مشتمل سہ فریقی اتحاد نے اسمبلی میں شور شرابہ شروع کردیا حزب اختلاف کے اراکین اپنی نشستوں سے اٹھ کھڑے ہوئے اور مسلسل ڈیسک بجاتے ہوئے شور مچاتے رہے اسمبلی میں شدید ہنگامہ آرائی کے باعث کان پڑی آواز نہیں سنائی دے رہی تھی کچھ دیر بعد جب حزب اختلاف کے اراکین نے واک آؤٹ کیا تو صوبائی وزیر خزانہ کی بجٹ تقریر سمجھ آنے لگی وزیر خزانہ مظفر سید نے بجٹ تقریر کرتے ہوئے کہا کہ

مزید :

صفحہ اول -