’صرف مسلم خواتین کو جنسی زیادتی کا نشانہ بناتاہوں‘،درندہ صفت انسان نے مکروہ عمل کی شرمناک وجہ بتادی

’صرف مسلم خواتین کو جنسی زیادتی کا نشانہ بناتاہوں‘،درندہ صفت انسان نے ...
’صرف مسلم خواتین کو جنسی زیادتی کا نشانہ بناتاہوں‘،درندہ صفت انسان نے مکروہ عمل کی شرمناک وجہ بتادی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لندن (نیوز ڈیسک) مغرب میں مسلمانوں کے خلاف عمومی تعصب تو کوئی نئی بات نہیں ہے لیکن مسلمانوں خواتین کو سوچے سمجھے منصوبے کے تحت جنسی جرائم کا نشانہ بنانے کا شرمناک معاملہ پہلی دفعہ کھل کر سامنے آرہا ہے۔ مسلمان خواتین کے خلاف بھیانک جنسی جرائم کا معاملہ اس وقت سامنے آیا جب مشرقی لندن کی پولیس نے ڈاگنہیم شہر سے 25سالہ مجرم عما نویل ندلگیوے کو گرفتار کیا۔

مزیدپڑھیں:ہمسفر سے پیا ر ختم ہو گیا لیکن پھر بھی اکھٹے ہیں کیونکہ۔۔۔

سراغ رساں انسپکٹر ٹریسی ملر کا کہنا ہے کہ یہ مجرم بالخصوص حجاب پہننے والی مسلمان خواتین کی تلاش میں رہتا تھا اور موقع ملنے پر ان کی عزت پر حملہ آور ہوتا تھا۔ مجرم نے لامیتھ اور ساﺅ تھوارک کے علاقے میں متعدد حجاب پوش خواتین کا تعاقب کیا اور ان کے ساتھ دست درازی کی۔ پولیس کے مطابق جنسی حملوں کے متعدد واقعات میں نظر آنے والی مماثلت کے بعد تفتیش کاروں کو شک گزرا کہ کوئی مجرم خصوصی طور پر مسلمان خواتین کو ہدف بنا رہا تھا۔ سراغ رسانوں نے پتا چلایا کہ مجرم حجاب پہننے والی خواتین کا تعاقب کرتے ہوئے ان کے گھر تک جاتا تھا اور جونہی وہ گھر میں داخل ہوتیں یہ بھی زبردستی اندر گھستا اور آبرو ریزی کے بعد فرار ہوجاتا۔
پولیس کو یہ بھی معلوم ہوا کہ مجرم نے ایک مسلمان خاتون کی اس کے بچوں کے سامنے عصمت دری کی جبکہ ایک اور مسلمان خاتون کو 89سالہ معمر فرد کے سامنے زیادتی کا نشانہ بنایا۔عدالت کی طرف سے مجرم کو دو مقدمات میں 6سال کی سزا سنائی گئی ہے، تاہم پولیس کا خیال ہے کہ اس کے جرائم کا شکار بننے والی متعدد دیگر خواتین بھی سامنے آئیں گی اور اس کے خلاف مزید قانونی کاروائی کی جا سکے گی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -