بجلی کے بلوں پر سرچارج کالعدم کرنے کے عدالتی حکم پرعمل درآمد کے لئے نیپرا کو درخواست دے دی گئی

بجلی کے بلوں پر سرچارج کالعدم کرنے کے عدالتی حکم پرعمل درآمد کے لئے نیپرا کو ...
بجلی کے بلوں پر سرچارج کالعدم کرنے کے عدالتی حکم پرعمل درآمد کے لئے نیپرا کو درخواست دے دی گئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(نامہ نگار خصوصی )بجلی کے بلوں پر عائدسرچارج کالعدم قرار دینے سے متعلق لاہور ہائی کورٹ کے حکم پرعمل درآمد کے لئے نیپرا کو درخواست دے دی گئی .یہ درخواست جوڈیشل ایکٹوازم پینل کی طرف سے دائرکی گئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ لاہور ہائی کورٹ بجلی کے بلوں پر ہر قسم کے سرچارج غیر آئینی قرار دے کر کالعدم کرچکی ہے ۔

09جون کوبجلی صارفین پر 4روپے تک کا سرچارج لگا دیا گیا جوغیر قانونی ، غیر آئینی اور اعلیٰ عدالتوں کے فیصلوں کی خلاف ورزی ہے ۔صارفین پر حکومت پاکستان ایک ایسا بوجھ ڈال رہی ہے جس میں ان کا کوئی قصور نہیں بجلی کے نقصانات، چوری یہ سب وزارت پانی و بجلی اور متعلقہ جنریشن ڈسٹری بیوشن کمپنیوں کا کام ہے عوام کے بنیادی حقوق کے ساتھ کھیلا جارہا ہے اور آئین کے آرٹیکل9،10-A،14،18،23،24، 25اور4,5 کی خلاف ورزی ہے اور عوام کا آئین کے آرٹیکل 3کے تحت استحصال کیا جارہا ہے ۔لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ آگیا ہے جس کے تحت نیپرا ایکٹ کے سیکشن 31(5)کوآئین سے متصادم قرار دے دیا گیا ہے ۔آئینی اور قانونی طور پر حکومت کی طرف سے لگائے جانے والے نئے سرچارج کی کوئی حیثیت نہیں ہے اسے واپس لیا جائے ۔

مزید :

لاہور -