نوازشریف نے اپنی تقریر میں چیف جسٹس اور آرمی چیف پر انگلی اٹھائی : عمران خان

نوازشریف نے اپنی تقریر میں چیف جسٹس اور آرمی چیف پر انگلی اٹھائی : عمران خان

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،آن لائن)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نواز شریف نے جے آئی ٹی کے سامنے کوئی نئی چیز پیش نہیں کی،انہوں نے پہلے سے لکھی ہوئی تقریر پڑھی۔تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے نتھیا گلی میں نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہو ئے کہا کہ قطری کاخط ان کا دفاع تھا، قطری نہیں آرہا،اب ان کے پاس بتانے کوکچھ نہیں کہ لندن محلات خریدنے کیلئے پیسے کیسے گئے؟انہوں نے کہا کہ نوازشریف نے جے آئی ٹی سے باہر آکر میڈیا سے گفتگو کی،شرمناک بات یہ ہے کہ یہ اسے اپنے خلاف سازش بتارہے ہیں۔ عمران خان نے کہا کہ یہ دو ہی طرف اشارہ کررہے ہیں یعنی فوج اور عدلیہ کہ وہ سازش کررہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ جب نئے آرمی چیف اور نئے چیف جسٹس آئے تو مریم نواز نے ٹویٹ کی کہ اندھیری رات نکل گئی ، طوفان نکل گیا۔عمران خان نے کہا کہ مریم نواز نے اپنی ٹویٹ میں یہ بھی کہا کہ اب حالات اچھے ہوگئے ، نئے آرمی چیف بھی آئے اور چیف جسٹس بھی آئے ان پر انہیں پورا اعتماد تھا، آج یہ انہی پر انگلیاں اٹھا رہے ہیں۔ عمران خان نے کہا ہے کہ وزیراعظم کی تقریر نے ثابت کر دیا کہ ان کے پاس منی ٹریل نہیں بلکہ وہ اعلیٰ عدلیہ اور فوج سے عداوت رکھتے ہیں۔ عمران خان نے کہا کہ نواز شریف نے لکھی تقریر پڑھی جس کسے مندرجات سے ثابت ہوتا ہے کہ ان کے پاس منی ٹریل نہیں ہے اور قطری شہزادے کے انکار کے بعد اب ان کے پاس دینے کو کچھ نہیں اس لئے تقریر میں نفرت انگیز زبان عدلیہ یا فوج کیلئے ہی استعمال کی، انہوں نے کہا کہ نواز شریف فوج سے عداوت رکھتے ہیں اور لگتا ہے کہ تقریر میں ان کا اشارہ اس طرف تھا کہ ان سب کے پیچھے وہ ہیں لیکن حقیقت یہ ہے کہ بے سوچے سمجھے قومی اداروں پر انگلیاں اٹھا رہے ہیں۔

عمران خان

مزید : صفحہ اول