مارگلہ کی پہاڑیوں پر بلا سٹنگ اور درختوں کی کٹائی پر سپریم کورٹ کا شدید اظہار برہمی

مارگلہ کی پہاڑیوں پر بلا سٹنگ اور درختوں کی کٹائی پر سپریم کورٹ کا شدید ...

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) مارگلہ کی پہاڑیوں اور درختوں کی کٹائی پر سپریم کورٹ نے اظہار برہمی کیا ہے۔ کیس کی سماعت کے دوران جسٹس شیخ عظمت سعید نے ریمارکس دیے کہ ایسا کریں مارگلہ کی پہاڑیاں بلڈوز کر دیں، درخت کاٹ دیں، درخت ہوں گے نہ جھگڑا ہو گا۔ جسٹس شیخ عظمت سعید نے استفسار کیا کہ کیا مارگلہ کی پہاڑیوں یا قریب وجوار میں کسی ہاوسنگ سکیم کی اجازت دی گئی ہے؟ مئیر اسلام آباد نے بتایا کہ ایسی کسی ہاوسنگ سکیم کی اجازت نہیں دی گئی۔ جسٹس شیخ عظمت سعید نے کہا کہ یہ چیز ہمیں لکھ کر دیں، نیشنل پارک عوام کی امانت ہے اور اس میں خود خیانت کریں نہ کسی دوسرے کو کرنے دیں۔ شیخ عظمت سعید نے مزید کہاکہ خیبر پختونخواہ کے علاقہ میں مارگلہ کی پہاڑیوں پر بلاسٹنگ اور مائننگ ہو رہی ہے، کیا ٹی وی پر خبر چلے تو ہی حکام کو قانون کی خلاف ورزی کا پتہ چلتا ہے؟ مقدمے کی مزید سماعت 5 جولائی تک ملتوی کر دی گئی۔

اظہار برہمی

مزید : صفحہ اول