وزیر اعظم نے بغیرپروٹوکول کے پیش ہو کر فقید المثال روایت قائم کی، صدیق ملک

وزیر اعظم نے بغیرپروٹوکول کے پیش ہو کر فقید المثال روایت قائم کی، صدیق ملک

لاہور(پ ر) رمضان المبارک میں خانہ خدا اور روضہ رسالت مآبؐپر حاضری دینا اور خشوع و خضوع سے بارگاہ رب العزت اور بارگاہ رسالتؐ میں ملک و قوم کی فلاح بہبود اور تعمیر و ترقی کے لئے ایک تڑپ کے ساتھ دست بہ دعا ہونا نواز شریف کا معمول ہے۔ ان سے پہلے کسی پاکستانی رہنما کو ایسا کرتے ہوئے نہیں دیکھا گیا۔ ان خیالات کا اظہار مسلم لیگ (ن) سیکنڈے نیویا (ڈنمارک ، سویڈن ، ناروے )کے صدر صدیق ملک نے اپنے ایک بیان میں کیا ہے۔ صدیق ملک جو نجی دورے پر آج کل پاکستان آئے ہوئے ہیں نے کہا کہ بغیر پروٹو کول کے ایک عام شہری کی حیثیت سے جی آئی ٹی کے سامنے پیش ہوکر وزیر اعظم نواز شریف نے ایک فقید المثال اور تاریخی روایت قیام کی ہے ۔جو اس بات کی غمازی کرتی ہے کہ نوازشریف قانون اور انصاف کی بالا دستی پر بھرپور یقین رکھتے ہیں۔

اور ان کا یہ اقدام مستقبل میں آنے والے وزرائے اعظم کے لئے ایک مشعل راہ ہے۔ ان کے اس اقدام سے بیس کروڑ پاکستانی خوش ہوئے۔ صدیق ملک نے کہا کہ وزیر اعظم کا یہ اقدام اتباع حضرت عمرؓ ہے جو قابل تحسین ہیں اور اس سے سیاست اور جمہوریت میں ایک نئے اسلوب کا اضافہ ہوا ہے جو قابل تعریف بات ہے۔ انہوں نے میاں نواز شریف کے مخالفین کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اگر وہ میاں نواز شریف کی راہ میں روڑے نہ اٹکاتے اور انہیں سکون سے کام کرنے دیتے تو ملک آج ترقی کی معراج پر ہوتا۔ انہوں نے سی پیک معاہدے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یہ معاہدہ ملک کے لئے ایک ٹرینڈ سیٹر ہے۔ جس سے ملک میں ترقی کی ایک نئی لہر آئے گی جس سے وطن عزیز اقتصادی طور پر مستحکم اور خوشحال ہوگا اور اس سے پاکستان کا ہر صوبہ اور ہر شہری مستفید ہوگا اور پاکستان کا شمار دنیاکی ترقی یافتہ اقوام میں ہوگا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4