کابل : مسجد کے باہر خود کش دھماکہ ، 6افراد جاں بحق ، ہلمند میں افغان فضائیہ کی کارروائی 45طالبان ہلاک

کابل : مسجد کے باہر خود کش دھماکہ ، 6افراد جاں بحق ، ہلمند میں افغان فضائیہ کی ...

کابل(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) افغانستان کے دارالحکومت کابل میں مسجد کے باہر خود کش دھماکے میں 6 افراد جاں بحق جبکہ متعدد زخمی ہو گئے ، افغان حکام نے صوبہ ہلمند میں افغان فضائیہ کی کارروائی میں اہم کمانڈروں سمیت 45طالبان جنگجوؤں کو ہلاک کرنے جبکہ داعش نے تورا بورا کا کنٹرول سنبھالنے کادعویٰ کیا ہے ،افغان حکام نے تصدیق کی ہے تاہم طالبان نے داعش کا دعویٰ مسترد کر دیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق جمعرات کی شام کابل کے نواحی علاقہ دشت برچی میں مغرب کی نماز کے فوراًبعد ایک خودکش بمبار نے خود کو شیعہ مسلمانوں کی ایک مسجد الزہراہ کے باہر دھماکے سے اڑا دیا جس کے نتیجہ میں ابتدائی طور پر 6 افراد جاں بحق جبکہ متعدد افراد زخمی ہوگئے جنہیں ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے ، طبی ذرائع نے جان نقصان میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا ہے ۔ دھماکہ کے بعد سکیورٹی فورسز نے جائے وقوعہ کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کر دیا ہے، جبکہ داعش نے دھما کے کی ذمہ داری بھی قبول کر لی ہے ،ادھر افغان صوبے ہلمند میں افغان فضائیہ کی کارروائی میں 43طالبان جنگجو ہلاک ہوگئے جنکا تعلق مختلف جنگجو گرو پوں سے بتایاجاتا ہے اور مارے جانیوالوں میں اہم طالبان کماندر بھی شامل ہیں۔ افغان میڈیا نے افغان وزارت داخلہ کے حوالے سے بتایا کہ ہلمند میں افغان فضائیہ نے طالبان کی پناہ گاہوں کو گزشتہ رات نشانہ بنایا ،افغان وزارت داخلہ کے حکام نے کئی طالبان کمانڈروں کی تصدیق کر تے ہوئے کہا ہے کہ جلد ان کمانڈروں کے نام ظاہر کر دیئے جائیں گے۔دوسری طرف کالعدم شدت پسند تنظیم داعش نے افغانستان میں طالبان کے مرکزی گڑھ تورا بورا پر قبضہ کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق داعش کمانڈر ابوعمر خراسانی کا کہنا ہے کہ و ہ اب تور ابورا میں ہیں اور یہ اختتام نہیں ہم طالبان اور حکومت سے مزید علاقے قبضے میں لیں گے،ننگرہار کے پولیس کمانڈر نے بھی داعش کے تورا بورا پر قبضہ کرنے کی تصدیق کی ہے تاہم طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے تورا بورا پرداعش کے قبضے کی تردید کی ہے۔

مزید : علاقائی